مشرقی برازیل میں زہریلے جھاگ کی موٹی تہہ نے دریا کو ڈھانپ لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

زہریلے جھاگ کی ایک موٹی تہہ نے جنوب مشرقی برازیل کے ایک دریا کے کچھ حصوں کو ڈھک دیا۔ یہ بادلوں جیسی تہہ جمعہ کے دن نیچے کی طرف پھیل گئی اور علاقے کے رہائشیوں کے لیے پریشانی کا باعث بنی۔

ڈرون کیمرے سے لی گئی تصاویر میں جھاگ کے بادل سالٹو کے قصبے میں دریائے ٹائیٹی پر تیرتے ہوئے نظر آتے ہیں جو ساؤ پالو کا سب سے بڑا دریا ہے۔

یہ دریا ایک ہزار کلومیٹر سے زیادہ طویل ہے اور ریاست کے مشرق سے مغرب تک پھیلا ہوا ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق، بدبودار جھاگ والی یہ تہہ صابن کے فضلے اور کیمیائی باقیات سے پیدا ہوتی ہے جن کو ٹھکانے لگانے کے لیے، صاف کیے بغیر جوں کا توں دریا میں پھینک دیاجاتا ہے۔

برازیل کی این جی او، ایس او ایس ماٹا اٹلانٹیکا نے رپورٹ کیا کہ 2022ء میں دریائے ٹائیٹی کے ایک حصے میں آلودگی میں 40 فیصد اضافہ ہوا۔ 2021 میں آلودہ علاقہ 85 کلومیٹر تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں