یوکرین کی حمایت جاری رہے گی، روس پر بھاری قیمت عائد کرتے رہیں گے: امریکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن نے کہا ہے کہ ہم یوکرین پر حملہ کی پاداش میں برآمدی پابندیوں اور دیگر رکاوٹوں کے ذریعہ روس پر بھاری قیمت عائد کرنا جاری رکھیں گے۔ اس طرح روس کی جنگ چھیڑنے کی صلاحیت کو محدود کیا جائے گا۔

اپنے ایک بیان میں بلینکن نے مزید کہا کہ ہم اپنے اتحادیوں کے ساتھ یوکرین کے ساتھ کھڑے رہیں گے تاکہ وہ اپنا دفاع جاری رکھے اور وقت آنے پر مذاکرات کی میز پر مضبوط ترین پوزیشن کے ساتھ بیٹھے۔ انہوں نے یہ بیان 24 فروری 2022 کو شروع ہونے والے یوکرین پر روسی فوجی آپریشن کے 500 دن مکمل ہونے کے موقع پر دیا۔

امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ روسی حکومت ہی یوکرین میں منصفانہ اور دیرپا امن کے حصول میں واحد رکاوٹ ہے۔

واضح رہے امریکہ نے جمعہ کو اعلان کیا تھا کہ وہ یوکرین کو روسی افواج کے خلاف جوابی حملے میں استعمال کرنے کے لیے وسیع پیمانے پر ممنوعہ کلسٹر بم فراہم کرے گا۔

امریکی محکمہ دفاع نے کہا کہ امریکی اقدام کو اتحادیوں کی جانب سے مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا ہے جنہوں نے کلسٹر گولہ بارود یوکرین کو فراہم کرنے کو قبول نہیں کیا۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے سی این این کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا کہ یہ ایک ایسے وقت میں بہت مشکل تھا جب کیف کی افواج ایک ماہ قبل روس کے زیر کنٹرول علاقوں کو بحال کرنے کے لیے شروع کیے گئے جوابی حملے میں میدان میں آگے بڑھنے کے لیے جدوجہد کر رہی تھیں۔ انہوں نے کہا تاہم واشنگٹن کو یقین دلایا گیا ہے کہ یہ ہتھیار شہریوں کے خلاف استعمال نہیں کیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں