وزیر کی گرفتاری پر لیبیا کے قبائل نے تیل پمپنگ بند کرنے کی دھمکی دیدی

مرکزی بینک کا گورنر بننے کے امیدوار بومطاری کو دو روز قبل طرابلس سے گرفتار کیا گیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لیبیا میں قبیلہ ‘‘ ازویہ‘‘ کے معززین اور شیوخ نے تیل کے ذخائر اور بندرگاہوں کو بند کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔ قبیلہ کے رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ سابق وزیر خزانہ فرج بومطاری جنہیں دو روز قبل طرابلس سے گرفتار کر لیا گیا تھا کو فوری رہا کیا جائے۔

ہومطاری سابق قومی معاہدے کی حکومت کے وزیر خزانہ اور مرکزی بینک کے گورنر کے عہدے کے امیدواروں میں سے ایک ہیں۔ ان کو گرفتار کرنے کی وجوہات نہیں بتائی گئیں۔ یہ وجوہات سیاسی ہیں یا بدعنوانی سے متعلق ہیں واضح نہیں کیا گیا۔

ہومطاری کا تعلق ازویہ قبیلہ سے ہے۔ قبیلہ نے ہومطاری کی فوری اور غیر مشروط رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ قبیلہ نے کہا کہ ہومطاری کی حفاظت کی ذمہ داری قومی یکجہتی حکومت کے سربراہ عبدالحمید الدبیبہ اور داخلی سلامتی کی ایجنسی اور پبلک پراسیکیوٹر کے دفتر پر عائد کی جائے گی۔

قبیلے نے الدبیبہ کی حکومت سے جمعرات کو ہومطاری کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا اور دھمکی دی کہ اگر اسے رہا نہ کیا گیا تو وہ تیل کے ذخائر اور بندرگاہوں کو بند کر دیں گے اور شدت پسندی کے اقدامات اٹھائیں گے ۔

واضح رہے لیبیا میں سابق عہدیداروں یا انسانی حقوق اور میڈیا کے کارکنوں کے اغوا یا انہیں حراست میں لینے کے واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں