سوڈان :ام درمان میں اسپتال پر سریع الحرکت فورس کا ڈرون حملہ ؛4 شہری ہلاک

سوڈانی حکومت کے نمائندوں کی آر ایس ایف کے ساتھ ازسرِنو جنگ بندی مذاکرات کے لیے جدہ آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈان کے دارالحکومت خرطوم کے جڑواں شہرام درمان میں نیم فوجی سریع الحرکت فورس (آر ایس ایف) کے ڈرون حملے میں چار شہری ہلاک اور چار زخمی ہو گئے ہیں۔

سوڈان کی وزارتِ صحت نے ہفتے کے روز اس حملے میں چارہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

سوڈان میں فوج اور آر ایس ایف کے درمیان گذشتہ تین ماہ سے لڑائی جاری ہے۔اس لڑائی کو روکنے کی غرض سے سوڈانی حکومت کے نمائندے نیم فوجی سریع الحرکت فورس کے ساتھ مذاکرات دوبارہ شروع کرنے کی غرض سے سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ پہنچ گئے ہیں۔

اس سے قبل سعودی عرب اور امریکا کی ثالثی میں جدہ میں مذاکرات جون کے اوائل میں جنگ بندی کی متعدد خلاف ورزیوں کے بعد معطل کر دیے گئے تھے۔سعودی عرب اور امریکا نے ابھی تک سوڈان کے متحارب دھڑوں کے درمیان مذاکرات کی بحالی کی تصدیق نہیں کی ہے۔

ان دونوں ممالک کے علاوہ مصر نے بھی سوڈان میں متحارب فورسز کے درمیان لڑائی رکوانے کے لیے ثالثی کی کوشش جمعرات کو شروع کی ہے۔سوڈانی فوج اور آر ایس ایف دونوں نے اس کا خیرمقدم کیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا اور سعودی عرب کی ثالثی میں متحارب فورسز کے درمیان جنگ بندی کے متعدد اعلانات کیے گئے ہیں لیکن یہ 15 اپریل سے ملک میں جاری لڑائی کو روکنے میں ناکام رہے ہیں۔سوڈانی فوج اور آر ایس ایف اقتدار کے حصول کے لیے لڑ رہے ہیں۔ اس مسلح تنازع کے نتیجے میں سوڈان میں 30 لاکھ سے زیادہ افراد بے گھر ہو چکے ہیں۔ان میں سے سات لاکھ سے زیادہ افراد اپنے گھربار چھوڑ کر ہمسایہ ممالک کی طرف نقل مکانی کر گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں