پوری دنیا میں شدید گرمی کی لہر ہلاکتوں اور آتشزدگی کا باعث بن سکتی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

چین سے لے کر یورپ اور امریکا تک دنیا میں آج ہفتے کے روز ریکارڈ درجہ حرارت دیکھا جا رہا ہے۔ بلند درجہ حرارت کی عالم گیر لہر کی وجہ سے مختلف ممالک میں حکومتوں نے آتش زدگی کے خطرے سے نمٹنے کے لیے سخت اقدامات کیے ہیں۔ ایسے لگ رہا ہے کہ گلوبل وارمنگ اور موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے ہونے والی شدید گرمی کی وجہ پریشان ہیں۔

اٹلی میں ملک کے شمال سے جنوب تک گرمی کی لہر دیکھی جا رہی ہے جس کے دوران آنے والے دنوں میں درجہ حرارت غیر معمولی حد تک بڑھ جائے گا۔

اسی مناسبت سے جمعہ کے روز وزارت صحت نے ایک ریڈ الرٹ نوٹس جاری کیا جس میں روم سے بولوگنا اور فلورنس سے پیسکارا تک کئی بڑے شہروں میں ہفتہ اور اتوارکو درجہ حرارت 36-37 ڈگری سینٹی گریڈ رہنے کا امکان ہے۔ تاہم اٹلی کے باشندوں کا کہنا ہے کہ ایسے لگتا ہے کہ درجہ حرارت 39 درجے سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔

روم میں پیر کو درجہ حرارت 40 درجے سینٹی گریڈ اور پھر منگل کو 42 یا 43 تک بڑھ سکتا ہے، جو اگست 2007 میں دارالحکومت میں قائم کردہ درجہ حرارت 40.5 ڈگری سینٹی گریڈ کو توڑ سکتا ہے۔

شمالی اٹلی بھی گرمی کی لہر سے محفوظ نہیں کیونکہ میلان میں منگل کو درجہ حرارت 38 ڈگری سیلسیس تک پہنچنے کی توقع ہے۔

بلند درجہ حرارت میں ثقافتی مقام بند

بحیرہ روم کے ممالک میں سے یونان بھی گرمی کی لہر کا شکار ہے، جس نے حکام کو دوسرے دن بھی ایتھنز میں ایکروپولیس کو گرم ترین اوقات میں بند کرنے پر مجبور کر دیا۔

وزارت ثقافت نے کہا ہے کہ یہ سائٹ جسے یونیسکو کی فہرست میں عالمی ثقافتی ورثہ کے مقامات میں شامل کیا گیا ہےشدید گرمی کے اوقات میں بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یونانی وزیر ثقافت اور کھیل لینا مینڈونی نے جمعے کو کہا کہ ایتھنز میں متوقع درجہ حرارت 40 اور 41 ڈگری سیٹی گریڈ رہنے کی توقع ہے لیکن ایکروپولیس میں درجہ حرارت زیادہ ریکارڈ کیا جائے گا۔

افریقہ اور ایشیا میں الرٹس

شمالی افریقہ میں مراکش موسم گرما کے آغاز سے ہی گرمی کی لہروں کا ایک سلسلہ دیکھ رہا ہے۔ اسی مناسبت سے کئی ریاستوں میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا۔

ایشیا میں چین کے دارالحکومت بیجنگ سمیت ملک کے بعض علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں ہیں۔

مشرقی جاپان کے کچھ حصوں میں اتوار اور پیر کو 38-39 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہونے کی بھی توقع ہے۔

امریکا میں ایریزونا کے دارالحکومت فینکس میں جمعہ کو درجہ حرارت لگاتار پندرہویں دن 43 ڈگری سینٹی گریڈ سے اوپر رہا۔

کیلیفورنیا میں آتش زدگی

ڈیتھ ویلی کیلیفورنیا کے صحرا میں فائر فائٹرز جمعے سے بھڑکنے والی جنگل کی آگ پر قابو پانے میں مصروف ہیں۔

یونیورسٹی آف کیلیفورنیا اور لاس اینجلس کے موسمیاتی سائنس دان ڈینیئل سوین کا کہنا ہے کہ وہاں کا درجہ حرارت 2020 اور 2021 میں اسی جگہ پر 54.4 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔

جون میں کینیڈا میں 500مقامات پر بے قابو آگ بھڑک اٹھی۔ کینیڈا میں لگنے والی آگ سے اٹھنے والے دھوئیں نے شمال مشرقی ریاستہائے متحدہ میں ہوا کو آلودہ کر دیا۔

یونان میں جہاں 2021ء کے موسم گرما کے دوران جنگلات میں خوفناک آگ بھڑک اٹھی تھی ایک بار پھر شدید نوعیت کی آگ کا خطرہ ظاہر کیا ہے۔

یورپی ایجنسی کوپرنیکس اور ناسا کے مطابق عالمی سطح پر جون ریکارڈ پر گرم ترین مہینہ تھا۔ اس کے بعد عالمی ادارہ موسمیات کے ابتدائی اعداد وشمار کے مطابق جولائی کا پورا پہلا ہفتہ ریکارڈ پر گرم ترین رہا۔

تنظیم نے زور دیا کہ گرمی موسم سے متعلق سب سے خطرناک واقعات میں سے ایک ہے۔ ایک حالیہ تحقیق کے مطابق گذشتہ موسم گرما میں صرف یورپ میں زیادہ درجہ حرارت سے 60,000 سے زیادہ اموات ہوئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں