تونس کے جنگلات میں پھر آگ لگ گئی، مزید پھیلاؤ کا خطرہ

حالیہ دنوں ریکارڈ گرمی ہو رہی، شدید درجہ حرارت اس ماہ کے آخر تک جاری رہنے کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

تونس میں شمالی شہر طبرقہ کے قصبے ملولہ کے درجنوں مکینوں کو اس وقت ان کے گھروں سے نکال لیا گیا جب اچانک وہاں آگ بھڑک اٹھی اور جنگلات میں تیزی سے پھیل گئی۔ علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ فائر فائٹرز نے آگ بجھانے کی کوششیں شروع کردیں۔

بدھ کے روز جندوبہ گورنری میں شہری تحفظ کی مقامی انتظامیہ نے اپنے بیان میں کہا کہ اس کے ارکان ان شہریوں کو بچانے میں کامیاب رہے جن کے گھر آگ میں گھرے ہوئے تھے۔ آگ پر قابو پانے اور آبادی تک پھیلنے کو روکنے کے لیے کوششیں جاری ہیں۔

ویڈیو کلپس میں جنگل میں لمبے لمبے درختوں اور دھوئیں کے گھنے بادلوں کو جلا ڈالنے والی آگ کو دکھایا گیا ہے۔ آگ بجھانے والی ٹیموں کو آگ بجھانے اور جنگل کے قریب رہائشی محلوں تک پہنچنے اور اس کے باہر نکلنے سے روکنے کے لیے وقت کے ساتھ دوڑتے ہوئے دکھایا گیا۔

تونس میں حالیہ عرصے کے دوران ریکارڈ بلند درجہ حرارت دیکھنے میں آرہا ہے جو اس ماہ کے آخر تک جاری رہنے کی توقع ہے۔ اس صورت حال میں گزشتہ برسوں کی طرح آگ کے دوبارہ لگ جانے اور پھیل جانے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔ گزشتہ برسوں میں بھی لگنے والی آگ نے ملک کے جنگلات کے بڑا نقصان پہنچایا ہے۔

گزشتہ برس اسی عرصے کے دوران تونس میں متعدد جنگلات میں لگنے والی آگ کے 10 سے زائد واقعات ریکارڈ کیے گئے جس سے تقریباً 500 ہیکٹر جنگلات کو نقصان پہنچا تھا۔ سب سے زیادہ سنگین آگ دارالحکومت کے جنوب میں واقع ماؤنٹ بوکورنائن میں لگی تھی۔ اس آگ کو بجھانے میں کئی دن لگ گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں