سوڈان: ڈاکٹرز ود آؤٹ بارڈرز کی ٹیم پر حملہ، مسلح افراد تشدد کے بعد گاڑی بھی لے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عالمی امدادی تنظیم ’’ڈاکٹرز وِدآؤٹ بارڈرز‘‘ نے واضح کیا ہے کہ سوڈان کے دارالحکومت خرطوم میں اس کی ٹیم پر حملہ کردیا گیا۔ مسلح افراد کے گروہ نے ٹیم کے افراد کو تشدد کا نشانہ بنایا اور ان کی گاڑی بھی لے اڑے۔

تنظیم ’’ڈاکٹرز وِدآؤٹ بارڈرز‘‘ نے ٹویٹر پلیٹ فارم پر واضح کیا کہ اس کے 18 ارکان کی ایک ٹیم پر جمعرات کو مسلح افراد کے ایک گروپ نے پرتشدد حملہ کیا۔ حملہ آوروں نے ٹیم کے افراد کو تشدد کا نشانہ بنایا اور انہیں کوڑے مارے۔

تنظیم نے مزید کہا کہ انہوں نے ہمارے ایک ڈرائیور کو گرفتار کرلیا جس کی جان کو اب خطرہ ہے۔ حملہ آوروں نے ٹیم کی ایک کار بھی چوری کرلی۔ تنظیم نے بتایا کہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب ٹیم تنظیم کے گوداموں سے طبی سامان خرطوم میں ترکیہ کے ہسپتال لے جا رہی تھی۔

تنظیم کے بیان کے مطابق ٹیم کو ہسپتال سے 700 میٹر کے فاصلے پر روکا گیا۔ یہ ہسپتال غیر سرکاری تنظیم کے تعاون سے جنوبی خرطوم میں چلایا جا رہا ہے اور یہ شہر میں صرف دو آپریٹنگ ہسپتالوں میں سے ایک ہے۔ ڈاکٹرز وِدآؤٹ بارڈرز نے خبردار کیا ہے کہ اس حملے کے نتیجے میں اس ترک ہسپتال میں ہماری موجودگی جاری نہیں رہ سکتی ہے۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب سوڈان میں فوج اور سریع الحرکت فورس کے درمیان لڑائی چوتھے مہینے میں داخل ہو چکی ہے۔ یہ لڑائی 15 اپریل کو شروع ہوئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں