یونان کے جزیرہ روڈس میں لگنے والی آگ سے تیس ہزار افراد کا انخلا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یونان کے ایک جزیرے میں لگنے والی آگ کے نتیجے میں بڑے پیمانےپر مقامی آبادی کا انخلاء جاری ہے۔

ہفتے کے روز 30,000 افراد کو یونانی جزیرے روڈس میں بھڑکتی آگ سے محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا، جن میں 2,000 کو کشتیوں کے ذریعے دوسرے مقامات پرلے جایا گیا۔

جنوبی ایجیئن کے علاقے کے گورنر جارج ہڈزیمارکوس نے اسکائی ٹی وی کو بتایا کہ آپریشن جو ابھی جاری ہے۔ آگ لگنے کی وجہ سے کچھ سڑکیں بند کردی گئیں۔

سیاحوں اور کچھ رہائشیوں کو جزیرے پر ہوٹلوں کے جموں، اسکولوں اور کانفرنس سینٹرز میں بھی لے جایا گیا جہاں وہ رات گزاریں گے جبکہ فائر فائٹرز آگ پر قابو پالیں گے۔

جزیرہ روڈس

ایتھنز نیوز ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ تین مسافر کشتی روڈس کی بندرگاہ پر انخلاء کے لیے لنگر انداز ہو گئی۔

روڈس میونسپلٹی کے اہلکار ٹیرس ہیٹزیوانو نے کہا کہ کوسٹ گارڈ، مسلح افواج اور مقامی عملے نے لوگوں کو آگ سے دور لے جانے میں مدد کے لیے درجنوں بسیں استعمال کیں۔

جیسے ہی آگ نے سڑک کو بند کر دیا، کچھ سیاحوں کو حفاظت کے لیے پیدل جانا پڑا۔

ویلج کونسل کے سربراہ نے بتایا کہ بہت سے باشندے سیاحوں کی مدد کے لیے پہنچ گئے۔ یہ ایسی صورت حال ہے جو اس جزیرے نے پہلے کبھی نہیں دیکھی ہو گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں