امریکی پولیس نے ہتھیار ڈالنے کے باوجود کتے کو سیاہ فام کو بھنبھوڑنے کیلئے چھوڑ دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی ریاست اوہائیو کی گلیوں میں تصور سے زیادہ خوفناک واقعہ پیش آگیا۔ ایک افریقی نژاد امریکی کے حد سے زیادہ تیز رفتار سے آگے نکلنے کی وجہ سے پولیس نے اس کا پیچھا شروع کردیا۔

یہ تعاقب اس وقت افراتفری میں بدل گیا جب فرار ہونے والا افریقی نژاد ایک کار سے ٹکرایا اور بھاگتا ہوا باہر نکلا۔ پولیس کے دستے نے سیاہ فام نوجوان کا تعاقب کیا۔ ’’روز‘‘ نامی نوجوان نے ہتھیار ڈالتے ہوئے ہاتھ اٹھائے۔ تاہم ایک پولیس افسر نے ملزم پر سونگھنے والے کتے کو چھوڑ دیا۔

ایک ویڈیو کلپ میں نوجوان اپنے بازو ہوا میں بلند کیے زمین پر گھٹنے ٹیکتا ہوا نظر آیا۔ اس کے باوجود ریان سپیک مین نامی افسر نے کتے "سرج" کو حملہ کرنے کا حکم دیا اور اپنے ساتھی دوسرے افسر کی وارننگ پر کان نہیں دھرے۔ اس کا ساتھی کہتا رہا کہ "کتے کو نہ چھوڑو، اس کے ہاتھ اوپر ہیں۔"

پولیس افسر نے کتے کو چھوڑ دیا تو اس نے افریقی نژاد ’’ روز‘‘ پر حملہ کردیا اور اس کا بازو کاٹ کر اسے گھاس والے راستے کے بیچ میں لے گیا۔

پہلے کاٹنے کے فوراً بعد روز نے مدد کے لیے چیخ کر کہا۔ ’’براہ کرم اسے دور کرو، براہ کرم اسے دور کرو۔" ۔ پولیس افسران نے سپیک مین سے کہا کہ کتے کو روز سے پیچھے ہٹنے کا حکم دیا جائے۔ ویڈیو میں دکھایا گیا کہ کتے کے دانتوں نے 30 سیکنڈ سے زیادہ روز کو پکڑے رکھا۔ روز کی جلد پر زخم آئے اور اس کے بازوؤں سے شدید خون بہتا نظر آیا۔

روز کو موقع پر ہی ابتدائی طبی امداد دی گئی۔ اسے ہسپتال لے جایا گیا۔ وہ اس وقت کاؤنٹی جیل میں ہے۔ اس پر پولیس سے فرار ہونے کا الزام لگایا گیا ہے۔ محکمہ پولیس نے کہا کہ اس نے واقعہ کی تحقیقات کے لیے ایک جائزہ بورڈ کا انعقاد کیا۔ اس کے نتائج اس ماہ کے آخر میں جاری کیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں