چین یوکرین میں روسی فوج کو ملٹری ٹیکنالوجی فراہم کر رہا: امریکی انٹیلی جنس کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمعرات کو جاری ہونے والی امریکی انٹیلی جنس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چین روس کی مغربی پابندیوں سے بچنے میں مدد کر رہا ہے اور ممکنہ طور پر ماسکو کو یوکرین میں استعمال کے لیے فوجی اور دوہری استعمال کی ٹیکنالوجی فراہم کر رہا ہے۔ یہ تشخیص نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر کے دفتر نے کی اور خفیہ معلومات پر ایوان کی سٹینڈنگ کمیٹی نے اسے جاری کیا ہے۔

یاد رہے فروری 2022 میں ماسکو کے یوکرین پر حملے کے بعد سے چین نے بارہا روس کو فوجی سازوسامان بھیجنے کی تردید کی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ چین کچھ دوہری استعمال کی ٹیکنالوجی فراہم کر رہا ہے جسے ماسکو کی فوج بین الاقوامی پابندیوں اور برآمدی پابندیوں کے باوجود یوکرین میں جنگ جاری رکھنے کے لیے استعمال کر رہی ہے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ کسٹم ریکارڈ سے پتہ چلتا ہے کہ چین میں سرکاری دفاعی کمپنیاں روسی سرکاری دفاعی کمپنیوں کے لڑاکا طیاروں کے لیے جہازوں کے نیویگیشن آلات، جیمنگ ٹیکنالوجیز اور اسپیئر پارٹس فراہم کر رہی ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ گزشتہ سال ماسکو کے یوکرین پر حملے کے بعد چین روس کے لیے زیادہ اہم پارٹنر بن گیا ہے۔ چین اور روس نے چینی یوآن میں طے شدہ دوطرفہ تجارت میں حصہ بڑھایا ہے اور دونوں ملکوں کے مالیاتی ادارے باہمی کرنسی میں ادائیگی کے نظام کے استعمال کو بڑھا رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں