بیلجیئم میں بھیانک قتل: ماں کو مار کے جسمانی اعضاء فریج میں رکھ کر نہر میں پھینک دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

بیلجیئم میں ایک شخص نے اپنی ماں کو قتل کرنے اور اس کے جسم کے کچھ حصوں کو فریج میں رکھ کے نہر برد کرنے کا اعتراف کیا ہے، استغاثہ نے جمعہ کو بتایا۔

منگل کو ملک کے مشرق میں لیج شہر کے قریب ایک نہر میں ریفریجریٹر سے دو بازو اور دو ٹانگیں ملی تھیں، جس سے قتل کی تفتیش کا آغاز ہوا۔

پھر تفتیش کاروں کو خاتون کی باقی لاش ایک کوڑے دان میں ملی جسے قریبی دریا میں پھینک دیا گیا تھا۔

لیج میں پبلک پراسیکیوشن آفس کے ایک ترجمان کے مطابق، خاتون کے جسم پر موجود ٹیٹو نے اس بات کا تعین کرنے میں مدد کی کہ یہ لاش ستر کی عمر کے لگ بھگ ایک خاتون کی ہے۔

ملزم، جس کی عمر 35 سال ہے، کو جمعرات کی صبح برسلز کے ہوائی اڈے کے قریب ایک ہوٹل سے گرفتار کیا گیا، جو جنوبی کوریا جانے کی تیاری کر رہا تھا۔

پولیس کی طرف سے پوچھ گچھ کے دوران، اس شخص نے اپنے جرم کا "اعتراف" کر لیا۔

کہا جاتا ہے کہ ملزم نے اپنے ساتھیوں میں سے کسی کے سامنے قتل کا اعتراف کیا، جس نے پولیس سے بات کرنے والے ایک اور شخص کے ساتھ معلومات شیئر کیں۔

ابتدائی تحقیقات کے مطابق، کووڈ وبا کے بعد اس کے ساتھ واپس آنے پر ماں اور بیٹے کے درمیان اکثر جھگڑا ہوتا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں