مغربی افریقا کے رہ نماؤں کی نیجر کی فوجی جنتا کو اقتدار چھوڑنے کے لیے ہفتے کی مہلت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مغربی افریقا کے رہ نماؤں نے نیجرمیں فوجی جنتا کو اقتدار سے دستبردار ہونے کے لیے ایک ہفتے کی مہلت دی ہے اور خبردار کیا ہے کہ وہ ’طاقت کے استعمال‘ سے گریز نہیں کریں گے۔انھوں نے فوری طور پر نیجر پر مالی پابندیاں عاید کردی ہیں۔

مغربی افریقا کی ریاستوں کی 15 رکنی اکنامک کمیونٹی (ای سی او ڈبلیو اے ایس) نے نیجر کے منتخب صدر محمد بازوم کی فوری رہائی اور بحالی کا مطالبہ کیا ہے۔انھیں نیجرمیں فوج نے گذشتہ بدھ کو اقتدار پر قابض ہونے کے بعد سے حراست میں لے رکھا ہے۔

اقتصادی کمیونٹی نے واضح کیا ہے کہ اگر حکام کے مطالبات ایک ہفتے کے اندر پورے نہیں کیے جاتے ہیں تو (ای سی او ڈبلیو اے ایس) جمہوریہ نیجر میں آئینی نظم و نسق کی بحالی کے لیے تمام ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔ اس طرح کے اقدامات میں طاقت کا استعمال بھی شامل ہوسکتا ہے۔

اتوار کے روز نیجیریا کے شہر ابوجا میں اجلاس کے بعد بلاک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس مقصد کے لیے ای سی او ڈبلیو اے ایس کے چیفس آف ڈیفنس اسٹاف فوری طور پر اجلاس بلارہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں