اطالوی وزیر اعظم اپنے قومی پرچم سے متعلق لا علم، سوال پر سبکی کا سامنا کرنا پڑا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اطالوی وزیر اعظم جارجیا میلونی کو توقع نہیں تھی کہ وہ نیا عہدے سبنھالنے کے بعد پہلے سرکاری دورے کے دوران امریکا میں ایک ایسی شرمناک صورتحال سے دوچار ہوں گی جو سوشل میڈیا پر ان کے چرچے کا باعث بن جائے گی۔

امریکی سینیٹ کے اکثریتی رہ نما چک شومر نے انہیں اس وقت مزید مشکل میں ڈال دیا جب انہوں نے مسز جارجیا سے ان کے ملک کے پرچم کے رنگوں کے معنی کے بارے میں پوچھا۔

اٹلی کی ’تجربہ کار سیاست دان‘ کے لیے یہ سوال حیران کن تھا اور اس کا ان کے پاس اس وقت کوئی جواب نہیں بن پڑا۔ انہوں نے حیرت سے سوال پوچھنے والے کی طرف دیکھا اور جواب نہ دے سکنے پر شرمسار ہو گئیں۔ وہ اسے ٹال بھی نہیں سکتی تھیں۔چنانچہ انہوں نے جھجکتے ہوئے جواب دیا: "ہاں... ہاں۔"

مگر یہ سوال کا جواب نہیں تھا۔ وزیر اعظم کے پاس پرچم کے رنگوں کے بارے میں جواب نہ ہونا اس بات کی علامت تھا کہ وہ اپنے قومی پرچم کے بارے میں کم ہی جانتی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ "وہ کسی چیز کے رنگ ہیں" پھر وہ تھوڑی دیر کے لیے خاموش رہیں اور بات دوبارہ شروع کی تو اتنا کہا کہ "پرچم پر رنگ کئی چیزوں کے لیے ہیں"۔ اس کے ساتھ ہی ہلکی سی مسکراہٹ کے بعد بات گول مول کر گئیں۔

سوال پوچھنے والے امریکی عہدیدار کو اندازہ ہوا کہ ان کے سوال پر اطالوی وزیر اعظم کو سبکی کا سامنا کرنا پڑا ہے تو انہوں نے بڑبڑاتے ہوئے سادہ ہنسی کے ساتھ جواب دیا۔

اطالوی پرچم کے رنگ کس چیز کی علامت ہیں

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اطالوی پرچم میں سبز رنگ میدانوں اور پہاڑیوں کی علامت ہے،سفید کا مطلب ہے برف جو کوہ الپس پر پڑتی ہے جب کہ سرخ رنگ سے مراد وہ خون ہے جو ملک کے لیے بہایا گیا تھا۔

میل لونی نے اپنے دورہ امریکا کا اختتام ایک ہیلتھ کانفرنس سے کیا جس میں انہوں نے امریکی صدر جو بائیڈن کے ساتھ واشنگٹن میں ہونے والی گفتگو کے بعد سفارت خانے سے بات کی۔

دونوں رہ نماؤں نے یوکرین، چین اور افریقہ میں جنگ پر تبادلہ خیال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں