بیٹے نے شہرت کے لیے کینسر کا جھوٹا دعویٰ کیا۔ ترک شیف بوراک کے والد کا نیا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترکیہ کے سیلیبریٹی شیف بوراک کی والد کے ساتھ کاروباری جنگ اور لفظی حملوں کا چرچا ان دنوں زبان زد عام ہے ۔

بوراک کے والد اسماعیل اوزدیمیر نے ان کے بارے میں نیا انکشاف کر کے مداحوں کو ایک بار پھر حیران کردیا۔

عربی زبان میں اپنے تازہ ترین میڈیا انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ شیف بوراک صحت کے کسی مسئلے کا شکار نہیں ہے، بلکہ انہوں نے پیٹ کم کرنے کے لیے سرجری کروائی ہے، تاہم انہوں نے شہرت حاصل کرنے کے لیے اپنے ناظرین کو ابہام کا شکار کیا۔

انہوں نے بتایا کہ بوراک ہسپتال گئے اور اپنے اضافی وزن سے جان چھڑانے کے لیے پیٹ کی سرجری کروائی، اس دوران افواہیں پھیل گئیں کہ انہیں کینسر ہے، مگر بوراک نے ہمدردیاں سمیٹنے کے لیے ان افواہوں کی تردید نہیں کی۔

اسی انٹرویو میں اسماعیل نے ایک بار پھر اپنے بیٹے بوراک پر حملہ کرتے ہوئے اس بات کی طرف اشارہ کیا کہ ترکیہ کے شہر ہاتائی میں آنے والے زلزلے کے وقت انہوں نے جو امدادی مہم شروع کی تھی وہ ایک دکھاوے کے سوا کچھ نہیں تھی، لیکن ساتھ ہی انہوں نے اس بات کا اعتراف کیا کہ بوراک دوسروں کی مدد کرنا پسند کرتے ہیں۔

اسماعیل نے بوراک کے دستخط کردہ دستاویو بھی پیش کیے، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مؤخر الذکر اس تجارت کو نہیں سمجھتے تھے، مگر وہ غیر ملکی لوگوں کے ساتھ شراکت داری سے واقف تھے۔

انہوں نے کہا کہ اپنے بیٹے کو کمپنی کے مالکانہ حقوق کا 50 فیصد دے دیا تھا، لیکن اس نے اپنی ماں کے پاس جانے کے بعد اپنا ارادہ بدل لیا، تاکہ جائیداد میں اپنے سوتیلے بھائی سے زیادہ حصہ حاصل کر سکے۔

بوراک کے والد نے متعدد مواقع پر اپنے بیٹے کی طرف سے لگائے گئے الزامات کی تردید کی ہے کہ انہوں نے بوراک کی کمپنی میں ان کےحقوق علم میں لائے کے بغیر ایک غیر ملکی تاجر کو 41 ملین ڈالر میں فروخت کر دیے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں