مصر میں پہلی بار, بحیرہ احمر کی گہرائیوں میں فوجی میوزیم کا قیام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر نے بحیرہ احمر کی گہرائیوں میں اپنی نوعیت کا پہلا ملٹری میوزیم قائم کیا ہے جسے آج جمعرات کو عرب وزراء اور اکابرین کی موجودگی میں منکشف کیا جائے گا۔

بحیرہ احمر کے گورنر میجر جنرل عمرو حنفی نے بحیرہ احمر کے پانیوں میں پہلا عسکری میوزیم قائم کرنے کا اعلان کیا۔

اس میں تین غوطہ خوری کے مقامات کو جمع کیا گیا ہے، یہاں 15 منفرد جنگی جہازوں کو غرق کیا جائے گا، جن میں سے ہر ایک کی کہانی ہے اور خاص اہمیت ہے۔ میوزیم کے قیام کا مقصد مصر کی فوجی تاریخ سے روشناس کروانا ہے۔

گورنر نے بتایا کیا کہ یہ مقام بحیرہ احمر گورنری کے ساحل سے دور واقع ہے، قدرتی چٹانوں پر دباؤ کم کرنے اور نئی چٹانیں بنانے کے لیے یہ مصروف ترین مقام ہے۔

اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ یہ تجربہ تاریخ کی دلکشی اور سمندری ماحول کی خوبصورتی کو یکجا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ "یہ پانی کے اندر ایک انوکھا تجربہ ہے، کیونکہ فوجی مقامات کے ارد گرد صاف پانی میں غوطہ خوری کرتے ہوئے، سیاح چھپے ہوئے خزانوں اور سمندری مخلوقات کو تلاش کر سکتے ہیں اور تاریخی اہمیت کے علاوہ فطرت کے ساتھ تاریخ کے امتزاج کا مشاہدہ کرنے سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔"

انہوں نے کہا کہ یہ غوطہ خوری کے شوقین افراد کو اس فوجی سامان کودیکھنے کا موقع دے گا جس نے مصر کی جنگی تاریخ میں فیصلہ کن کردار ادا کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں