’مگرمچھ کے جبڑوں میں پھنسنے کے بعد ایسے لگا کہ زندگی ختم ہو گئی ہے‘

انڈونیشیا میں ڈیڑھ گھنٹے تک خوںخوار مگرمچھ کے جبڑوں میں پھنسی خاتون جس کا زندہ بچ جانا معزے سے کم نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مگرمچھ کے جبڑوں میں چلے جانے کے بعد شکار کے لیے زندہ بچ جانا خدائی معجزہ ہی ہو سکتا ہے جیسا کہ انڈونیشیا میں پیش آیا جہاں ایک خاتون خون خوار مگرمچھ کے جبڑوں میں 90 منٹ تک رہنے کے باوجود زندہ بچ گئی تھی۔ مگرمچھ کے جبڑوں میں پھنسی خاتون کو زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ 38 سالہ والمیرا ڈی جیسوس مغربی کالیمانتان صوبے میں کھجور کے باغات پر کام کر رہی تھیں۔ جب وہ گھاس کی تہہ سے ڈھکی ہوئی ندی سے پانی لینے کے لیے آئی تو ایک مگرمچھ نے اس پر حملہ کر دیا اور اس کی ٹانگ پکڑ لی۔

’اوڈیٹی سینٹرل‘ ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق مگرمچھ نے خاتون کو نگلنے کے لیے پانی میں گھسیٹنے کی کوشش کی۔

خاتون مدد کے لیے چیخنا شروع کر دیا اور مگرمچھ سے لڑنے میں کامیاب رہی۔ کافی دیر بعد اس کے ساتھی مدد کے لیے پہنچے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر بڑے پیمانے پر گردش کرنے والی ایک ویڈیو میں خاتون کو دکھایا گیا ہے۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ مگرمچھ کے جبڑوں میں پھنسی خاتون کو اس کے ساتھی نے لکڑی کا لٹھ پکڑایا۔

خاتون کا زندہ بچنا محال تھا

مگرمچھ کے جبڑوں میں پھنسی خاتون کا زندہ بچنا محال تھا مگرڈیڑھ گھنٹے تک موت کے منہ میں رہنے کے بعد اسے بچا لیا گیا۔

والمیرا نے ہسپتال میں اپنے بستر پر بات کرتے ہوئے کہا: "مگرمچھ کی جانب سے پکڑے جانے سے مجھے شدید تکلیف تھی۔ میری قوت برداشت ختم ہوتی جا رہی تھی۔ میں نے سوچا کہ میں لامحالہ مر گئی ہوں کیونکہ یہ مجھے مضبوطی سے نیچے پانی کی طرف کھینچ رہا تھا۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ مگرمچھ نے والمیرا کو ڈیڑھ گھنٹے تک پکڑے رکھا اور اسے پانی میں نیچے گھسیٹنے کی بارہا کوشش کی لیکن خوش قسمتی سے دریا اتنا گہرا نہیں تھا۔ آخر کار مگرمچھ نے اپنے شکار کو چھوڑ دیا۔

خیال رہے کہ انڈونیشیا 14 سے زیادہ اقسام کے مگرمچھ پائے جاتے ہیں۔ جبڑوں میں پکڑے شکار کا چھوٹ جانا حیران کن اور قدرت کا ایک ناقابل یقین معجزہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں