"پلے سٹیشن" مفت بانٹنے کا اعلان، امریکی یوٹیوبر نے نیویارک میں ہنگامہ برپا کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سوشل نیٹ ورکس پر 21 سالہ سوشل میڈیا انفلوئنسر کائی سینیٹ نے جمعہ کے روز نیویارک میں ایک حیرت انگیز اجتماع منعقد کرکے ہنگامہ برپا کر دیا۔ اس اجتماع میں تقریباً دو ہزار نوجوان شامل تھے، لیکن جلد ہی یہ لوگ سڑکوں پرپھیل گئے۔ افراتفری اور تشدد کی کیفیت پیدا ہوگئی جس سے متعدد افراد زخمی ہوئے۔ آخر کار پولیس کو مداخلت کرنا پڑی اور اس نے کچھ نوجوانوں کو گرفتار کرکے حالات پر قابو پایا۔

کہانی کا آغاز مشہور یوٹیوبر کے "انسٹاگرام" کے ذریعے ملاقات کے دعوت نامے سے ہوا، جس میں اس نے اپنے فالورز سے جنوبی مین ہٹن میں ان سے ملنے کو کہا، جہاں اس نے کہا کہ وہ براہ راست نشریات کے دوران حاضرین میں مختلف تحائف تقسیم کریں گے۔ ان تحائف میں ویڈیو گیم " پلے اسٹیشن 5" ڈیوائسز مفت تقسیم کی جائےگی۔

فالورز کو دعوت مہنگی پڑی

امریکی ٹیلی ویژن کے مطابق ہزاروں نوجوانوں نے اس دعوت کا جواب دیا اور دو ہزار سے زیادہ نوجوان مین ہٹن جزیرے کے جنوب میں یونین اسکوائر کے علاقے میں اپنے اسٹار کائی سینیٹ کو دیکھنے کی امید لیے جمع ہوئے۔ اس کے دیگر سوشل میڈیا پرپلیٹ فارمز پربھی فالورز کی تعداد ہزاروں میں ہے۔

اچانک بغیر کسی وارننگ کے نوجوانوں نے قریبی جگہ سے پراجیکٹائل پھینکنا شروع کر دیے، جس سے دوسرے لوگوں اور پولیس کو نشانہ بنایا گیا۔

ٹیلی ویژن چینلز پر دکھائی جانے والی فوٹیج میں لوگوں کو کاروں کے گرد گھیرا ڈالتے، ان کی نقل و حرکت میں رکاوٹ ڈالتے اور ایک سیاہ ایس یو وی کی چھت پر چڑھتے ہوئے بھی دکھایا گیا۔

اس کے بعد پولیس حرکت میں آئی اور اس نے ھجوم کو منتشر کرنے کے ساتھ ساتھ کئی منچلوں کو گرفتار کر لیا۔

پرتشدد کارروائیاں

نیو یارک سٹی پولیس کے موجودہ سربراہ جیفری ماڈرے نے پڑوس سے ایک مختصر پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ "میں نے ذاتی طور پر نوجوانوں کو چلتے ہوئے دیکھا۔ ان کے سروں اور چہروں سے خون بہہ رہا تھا،میں نے نوجوانوں کو گھبراہٹ، اضطراب اور دمہ میں مبتلا دیکھا اور صورت حال قابو سے باہر تھی۔"

انہوں نے مزید کہا کہ "ہمیں دوبارہ کنٹرول حاصل کرنے میں کچھ وقت لگا اور نوجوانوں میں کئی زخمی ریکارڈ کیے گئے۔"

دن کے اختتام پر 1,000 پولیس اہلکار مارچ کو منتشر کرنے میں کامیاب ہوئے ماڈرے نے کہا کہ پولیس نے کئی گرفتاریاں کی ہیں، اور کائی سینیٹ سے اس وقت باضابطہ طور پر حراست میں لیے بغیر پولیس اسٹیشن میں ہنگامہ آرائی پر اکسانے پر پوچھ گچھ کی گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں