مصر: تعزیتی تقریب میں تلاوت کے دوران قاری پر پیسے نچھاور کیے جانے پر ہنگامہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرمیں سوشل میڈیا پر گذشتہ دو روز سے ایک ایسی ویڈیو گردش کررہی ہے جس میں مصرکے ایک مشہورقاری کو تعزیتی تقریب کے دوران تلاوت کلام پاک کرتے اور اس دوران ایک شخص کی طرف سے ان پر پیسے نچھاور کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

اس ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر ایک ہنگامہ برپا ہوگیا۔ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب ایک تعزیتی تقریب میں تلاوت کے دوران وہاں موجود ایک شخص نے مشہور قاری الشیخ محمود القزاز پیسے پھینکنا شروع کیے۔

نا مناسب حرکت

اس ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد قاری القزاز ایک بیان میں اس پر اپنا رد عمل پیش کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے تعزیتی تقریب میں خلل پیدا ہونے کی وجہ سے تلاوت نہیں روکی بلکہ جاری رکھی۔ اس دوران ایک شخص کا پیسے نچھاور کرنا غیر اخلاقی حرکت اور نا مناسب تھا۔

انہوں نے پیر کی شام ٹیلیویژن کو دیےگئے بیانات میں یہ بھی انکشاف کیا کہ وہ واقعی حیران تھے یہ کیا ہو رہا ہے۔ انہوں نے تعزیت کے اختتام کے بعد اس فعل کے مرتکب شخص کو مورد الزام ٹھہرایا۔

مصری کرنسی
مصری کرنسی

انہوں نے زور دے کر کہا کہ میں نے اس ویڈیو کو سوشل میڈیا سے ڈیلیٹ کرنے کو کہا ہے۔ نیز مجھ پر پیسے نچھاور کرنے کے بجائے یہ رقم سوگواروں کے پاس جانی چاہیے تھی۔

معاملہ یہیں نہیں رکا بلکہ مصرمیں قراء کونسل کے سربراہ الشیخ محمد حشد نے اس واقعے کی مذمت کرتے ہوئے اسے ’مضحکہ خیز‘ قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں