مردہ بھارتی سیاستدان آخری رسومات کے دوران زندہ ہوگیا

مہیش بگھیل کوہسپتال سے مردہ قراردیے جانے کے بعد گھر منتقل کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

بھارتی ریاست اتر پردیش میں بھارتی حکمراں جماعت بی جے پی کے لیڈرکو اسپتال والوں نے مردہ قرار دے دیا، لیکن بعد میں گھر پر وہ زندہ ہوگئے۔بی جے پی لیڈر مہیش بگھیل کو مردہ قرار دیے جانے کے بعد اس وقت ہوش آیا جب اہلخانہ ان کی آخری رسومات کی تیاری کررہے تھے۔

ڈاکٹرز اہل خانہ سے کہہ چکے تھے کہ اب کچھ نہیں کیا جاسکتا، ان میں زندگی کی کوئی رمق باقی نہیں ہے۔مردہ قرار دیے جانے والے بی جے پی کے سابق ضلعی صدر کے بھائی نے کہا کہ مقامی اسپتال کے ڈاکٹروں نے گھر والوں سے کہا تھا کہ زیادہ کچھ نہیں کیا جاسکتا ہے اور بہتر ہے کہ انہیں گھر لے جایا جائے۔

اہل خانہ نے ڈاکٹروں کی ہدایات پر عمل کیا اور یہی سوچا کہ مہیش بگھیل مر چکے ہیں۔بھائی نے بتایا کہ آخری رسومات کے لیے تیاریاں کی جارہی تھیں کہ ان کے جسم میں کچھ حرکات دیکھی گئیں اور فورا دوسرے اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ان کی حالت نازک ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بی جے پی رہنما ان کے سینے میں انفیکشن کی تشخیص ہوئی ہے اور وہ اسی کا علاج کروا رہے ہیں۔ بگھیل کو دوبارہ زندگی ملنے کی خبر سن کر بی جے پی کے کئی مقامی رہنماؤں نے اسپتال جا کر عیادت کی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں