کھیلوں اور امن کا عالمی فورم پہلی بار سعودی عرب کی میزبانی میں ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کو رواں سال ’اسپورٹ اینڈ پیس‘ فورم کی میزبانی کا اعزاز حاصل ہو رہا ہے۔ یہ ایونٹ مملکت میں پہلی بار منعقد ہوگا۔

ریاض اپنی تاریخ میں پہلی بار انٹرنیشنل فورم فار اسپورٹ اینڈ پیس کی میزبانی کرنے کی تیاری کر رہا ہے، جس کا اہتمام سعودی اولمپک اور پیرا اولمپک کمیٹی نے کھیلوں اور امن کے لیے کام کرنے والی تنظیموں کے تعاون سے 18 سے 19 اکتوبر کے دوران ڈپلومیٹک انکلیو کے کلچرل محل میں منعقد ہوگا۔

"کھیل امن کی کلید ہے" کے عنوان سے اس فورم کا مقصد مثبت اقدار، رویوں اور طرز عمل کو پھیلانے کے لیے ایک چینل کے طور پر کھیل کے کردار کو بڑھانا ہے جو عالمی امن کی اقدار کے قیام کا باعث بنتے ہیں۔ یہ کھیل کی طاقت اور اثر و رسوخ کی وجہ سے ہے جو کہ ایک عالمی مواصلاتی ٹول اور ایک ایسی زبان ہے جو سب بولتے ہیں۔

ریاض میں رائل کمیشن کے ڈپلومیٹک کوارٹر آفس کے تعاون سے منعقد ہونے والے اس فورم میں بہت سے سیشنز شامل ہوں گے جن میں کھیلوں کے اہم واقعات، خواتین کے کھیلوں کو بااختیار بنانے، کھیلوں کے پہلو میں مملکت کے وژن 2030، معیار زندگی کے پروگرام، ڈائیلاگ سیشنز کے علاوہ دنیا کے ممتاز کھلاڑی، تاجر اور اہم شخصیات شرکت کریں گی۔ فورم میں مختلف ممالک سے سائنسی اور غیر منافع بخش تنظیموں کے عہدیدار، کھیلوں کی کمپنیاں اور اقوام متحدہ کی ایجنسیاں بھی شامل ہوں گی۔

سعودی عرب کے وزیر کھیل شہزادہ عبدالعزیز بن ترکی بن فیصل بن عبدالعزیز جو مملکت میں اولمپک اور پیرا اولمپک کمیٹی کے چیئرمین بھی ہیں نے مملکت میں کھیلوں کے شعبے کے لیے فراخدلانہ اور لامحدود حمایت پر قیادت کا شکریہ ادا کی۔

شہزادہ عبدالعزیز نے دنیا کے مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے تمام شرکاء کو ان کے دوسرے ملک سعودی عرب میں کھیل اور امن کے عالمی فورم کی تیاریوں پرخوش آمدید کہا اور امید ظاہر کی کہ یہ فورم کھیلوں کو عالمی امن کے کردار کو مضبوط بنانے میں معاون ثابت ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں