ایرانی وزیر خارجہ کی سعودی ولی عہد سے ملاقات، دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے اپنے دورہ سعودی عرب کے دوران سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود سے ملاقات کی۔

تعلقات کا جائزہ

سعودی پریس ایجنسی ’ایس پی اے‘ کے مطابق ملاقات کے دوران انہوں نے مملکت اور ایران کے درمیان تعلقات، دونوں ممالک کے درمیان مستقبل میں تعاون کے مواقع اور انہیں ترقی دینے کے طریقوں کا جائزہ لینے کے علاوہ علاقائی اور بین الاقوامی میدانوں میں ہونے والی صورتحال اور ان کے لیے کی جانے والی کوششوں پر تبادلہ خیال کیا۔

مفید نتیجہ خیز گفتگو

اس موقع پر ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ "میں نے شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ نتیجہ خیز اور مفید بات چیت کی۔‘‘

انہوں نے خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کا تہنیتی پیغام بھی پہنچایا، جب کہ شہزادہ محمد بن سلمان نے خادم حرمین شریفین کی طرف سے ایرانی صدر کے لیے مبارکباد اور تحسین کا پیغام دیا۔

خطے میں امن وامان کا قیام

گذشتہ روز سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے اپنے ایرانی ہم منصب کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں اس بات کی تصدیق کی کہ ایران کے ساتھ سفارتی تعلقات کی بحالی خطے کی سلامتی کے لیے ایک اہم نکتہ ہے۔

انہوں نے تہران کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کی مملکت کی خواہش پر بھی زور دیا اور کہا کہ دونوں فریقوں کے درمیان باہمی اعتماد کو بڑھانے کی خواہش مخلص اور سنجیدہ ہے۔

مملکت کے کردار کی قدر کرتے ہیں

ایرانی وزیر خارجہ عبداللہیان نے کہا کہ انہوں نے ریاض میں نتیجہ خیز بات چیت کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم خطے میں مملکت کے کردار کی قدر کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سعودی عرب کے ساتھ مل کر خطے کے مسائل کو فوری طور پر حل کر سکتے ہیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ سعودی عرب کے ساتھ تعلقات درست سمت میں آگے بڑھ رہے ہیں اور ترقی کی گواہی دے رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کا ملک سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو فروغ دینے اور مضبوط کرنے کے لیے پرعزم ہے۔

تعلقات کی بحالی

قابل ذکر ہے کہ دونوں ممالک نے گذشتہ مارچ میں بیجنگ میں 2016 سے منقطع سفارتی تعلقات دوبارہ شروع کرنے، اپنے سفارتی مشنز کو دوبارہ کھولنے کے ساتھ ساتھ 2001 میں ان کے درمیان طے پانے والے سکیورٹی تعاون کے معاہدے کو فعال کرنے پر اتفاق کیا تھا۔

بعد ازاں تہران نے دونوں فریقوں کے درمیان تعلقات کی بحالی کے اعلان کے تقریباً دو ماہ بعد معاون وزیر خارجہ علی رضا عنایتی کو مملکت میں اپنا نیا سفیر مقرر کیا۔

گذشتہ جون میں سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان سرکاری دورے پر تہران گئے تھے۔ اس دوران انہوں نے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی سے ملاقات کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں