روس کا سکولوں میں طلبہ کو جنگی ڈرون چلانے کی تربیت دینے کا اعلان

"بنیادی فوجی تربیت" کے فریم ورک کے تحت 15 سے 17 سال کی عمر کے طلبہ کو شامل کیا جا رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روس نے ہائی سکول طلبہ کو جنگی ڈرون چلانے کی تربیت دینے کا اعلان کردیا۔ اعلان میں کہا گیا کہ ستمبر سے شروع ہونے والے نئی تعلیمی سال سے پروگرام پر عمل شروع کردیا جائے گا۔

یوکرین میں جنگ شروع ہونے کے تقریباً 18 ماہ بعد وزارت تعلیم کی طرف سے شائع ہونے والے ایک پروگرام نے ظاہر کیا کہ روسی نوجوان ڈرونز کے فوجی استعمال کے ذرائع کے متعلق سیکھ سکیں گے۔ یا وہ کسی طرح ڈرون کے ذریعہ پوشیدہ مشنوں کا استعمال کرتے ہوئے جاسوسی کے مشن کو انجام دینا سیکھ سکیں گے۔

ان سکول طلبہ کو ڈرونز کی ٹھوس آزمائشی کارروائیاں کرنے اور دشمن کے ڈرون سے بچنے کے طریقے سیکھنے کا موقع بھی فراہم کیا جائے گا۔ یہ مشقیں بنیادی فوجی تربیت کے فریم ورک کے اندر 15 سے 17 سال کی عمر کے طالب علموں کو دی جائیں گی۔

یاد رہے سوویت دور میں بھی سکول کے طلبہ کو فوجی طرز کی تربیت فراہم کی جاتی تھی اور پھر انہیں ترک کردیا گیا تھا تاہم اب تعلیمی سال 2023-2024 کے آغاز سے ان تربیتوں کا دوبارہ آغاز کیا جارہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں