’فوت شدہ ماں کی لاش سے چھ دن لپٹی تین سالہ بچی سمجھتی تھی کہ ماں سوئی ہوئی ہے‘

مصرمیں اکیلے گھر میں فوت ہونے والی خاتون اور اس کی تین سالہ بچی کا المناک واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں بحیرہ احمر کی گورنری کے شہر الغردقہ میں ایک انسانی المیہ اس وقت پیش آیا جب اہل علاقہ کو 6 روز قبل فوت ہونے والی خاتون اور اس کی تین سالہ بھوکی پیاسی بچی کا پتا چلا۔

پڑوسیوں کو چھوٹی بچی کے مسلسلے رونے کی آواز آنے لگی تو انہوں نے خاتون سےرابطے کی کوشش کی تاہم گھر کے اندر سے انہیں کوئی جواب نہ ملا۔

اہل محلہ نے پولیس کو مطلع کیا۔ انہوں نے اس کے گھر کے اندر سے بچی کی مسلسل چیخیں سنیں۔

انہوں نے اپارٹمنٹ کا دروازہ بھی کھٹکھٹایا لیکن کسی نے جواب نہیں دیا جس سے انہیں یقین ہو گیا کہ بچہ اپارٹمنٹ میں بند ہے۔

میں نے سوچا کہ وہ سو رہی ہے

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اس جگہ پر پہنچی اور اپارٹمنٹ میں داخل ہونے پر پتا چلا کہ چھوٹی بچی اپنی مردہ ماں کی لاش کے ساتھ لپٹی ہوئی ہے اور بھوک اور پیاس سے نڈھال ہے۔

تحقیقات اور فرانزک رپورٹ سے معلوم ہوا کہ ماں ایمان کی عمر 31 سال تھی جو کفر الشیخ گورنری کے شہر قلین سے تھی اور وہ 6 دن قبل انتقال کر گئی تھی۔

جب کہ اس کی لاش گھر کے اندر رہی۔ اس پورے عرصے میں چھوٹی بچی جو اپنی ماں کے ساتھ اکیلی رہتی تھی۔ اسے لگا کہ ماں سو رہی ہے۔

حکام نے خاتون کی لاش کو الغردقہ جنرل ہسپتال کے مردہ خانے میں جمع کرا دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں