ایرانی عدالت کا امریکہ کو بغاوت کی منصوبہ بندی پر 330 ملین ڈالر ادا کرنیکا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایرانی عدالت نے امریکہ کو بغاوت کی منصوبہ بندی کرنے پر 330 ملین ڈالر ادا کرنے کا حکم دے دیا۔ گزشتہ برس فوجی بغاوت میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین نے ایران کی بین الاقوامی عدالت میں قانونی درخواست دائر کی تھی جس میں امریکہ سے ہرجانے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

عدالت نے ان کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے حکم دیا کہ امریکی حکومت مدعیوں کو 30 ملین ڈالر مادی اور اخلاقی نقصانات اور 300 ملین ڈالر تعزیری ہرجانے کی مد میں ادا کرے۔ 1979 کے اسلامی انقلاب کے ایک سال بعد جس نے امریکی حمایت یافتہ شاہ کا تختہ الٹ دیا تھا زیادہ تر فوجی افسران کے ایک گروپ نے نئی حکومت کا تختہ الٹنے کی کوشش کی تھی۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی ’’IRNA‘‘ نے کہا کہ "باغیوں" کی قیادت ایرانی فضائیہ کے سابق کمانڈر سعید مہدیون کر رہے تھے اور ان کا ہیڈ کوارٹرز مغربی صوبہ ہمدان کے ایک فضائی اڈے نوجہ میں تھا۔ بغاوت کے منصوبہ سازوں اور حکومتی فورسز کے درمیان جھڑپوں میں متعدد افراد ہلاک اور متعدد کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

ان کا مقصد پورے ملک میں فوجی اڈوں پر قبضہ کرنا اور انقلابی رہنماؤں کے سٹریٹجک مراکز اور رہائش گاہوں کو نشانہ بنانا تھا۔ تاہم ان کی کوششوں کو ناکام بنا دیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں