ٹرمپ اپنی مجرمانہ تصویر پوسٹ کرکے ٹویٹر کے بارے میں سرپرائز تیار کر رہے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

گزشتہ جمعرات سے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی مجرمانہ تصویر جنگل کی آگ کی طرح پھیلتی جا رہی ہے اور ریکارڈ توڑ رہی ہے۔

جمعرات کی رات جارجیا کی فلٹن کاؤنٹی جیل میں ان کی لی گئی مشہور تصویر کے جاری ہونے کے بعد سے ان کی مہم نے 7.5 ملین ڈالر کا کاروبار کیا ہے۔

ٹرمپ نے اڑھائی سال تک اپنے ’ایکس‘ سابقہ ’ٹویٹر‘ اکاؤنٹ کو غیر فعال رکھا۔ پر تصویر پوسٹ کرنےکا تعلق ہے تو ان کے معاونین کا کہنا ہے کہ ٹرمپ اپنے زیادہ سےزیادہ فالورز تک اپنی تصویر پہنچانا چاہتے ہیں۔

ٹرمپ آئندہ سال صدر بن سکتےہیں، اس لیے ’ٹویٹر‘ پر واپس آئے

امریکی ایکسیس نیوزویب سائٹ کے مطابق ٹرمپ کے معاونین نے انکشاف کیاہے کہ ریپبلکن صدر جو 2024 کے انتخابات میں وائٹ ہاؤس میں دوسری مدت صدر بن سکتے ہیں، اس لیے وہ ’ٹویٹر‘ موجودہ ’ایکس‘ پلیٹ فارم پر فعال ہورہے ہیں۔

تاہم ساتھ ہی انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ انہوں نے جنوری 2021 میں ٹویٹرنے ان کے ٹروتھ سوشل پیج پرپابندی عاید کی تھی۔ یہ پابندی اس وقت عاید کی گئی تھی ٹرمپ کے سیکڑوں حامیوں نے کیپیٹل عمارت پر دھاوا بول دیا تھا۔

ایک معاون نے کہا کہ "میں اسے صدر ٹرمپ پر چھوڑ دوں گا کہ وہ فیصلہ کریں کہ وہ اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس کو کس طرح استعمال کرنا چاہتے ہیں لیکن انہوں نے مزید کہا "دیکھتے رہیں آگے کیا ہوتا ہے۔"

لاؤڈ اسپیکر

اپنی تصویر پوسٹ کرکے ٹرمپ نے ٹویٹر پر ڈھائی سال سے زائد عرصے تک جاری رہنے والے وقفے کو توڑ دیا، جہاں انہیں لاکھوں لوگ فالو کرتے ہیں۔ مشہور ارب پتی ایلون مسک کی ملکیت والے پلیٹ فارم پر ان کی واپسی کا امکان ظاہر کرتا ہے۔ وہ اپنے پچھلے دور صدارت میں اس اکاؤنٹ کو ہرچیز کے اعلان کے لیے لاؤڈ اسپیکر کی طرح استعمال کرتےتھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں