یوکرین میں دو طیاروں کے تصادم میں ہلاک 3 پائلٹوں کے نام جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یوکرین حکام نے ملک کے مغرب میں دو لڑاکا طیاروں کے ہوا میں ٹکرانے سے تین پائلٹوں کی ہلاکت کے بعد تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق یوکرینی فضائیہ کے ترجمان یوری اھنات نے اتوار کو سرکاری ٹیلی ویژن کو بتایا کہ وہ نہیں جانتے کہ تحقیقات میں کتنا وقت لگے گا۔

یوکرین کی فضائیہ نے "ٹیلی گرام" میں اپنے سرکاری اکاؤنٹ پر اطلاع دی کہ دو ’’ایل 39‘‘ فوجی طیارے جمعہ کو ملک کے مغرب میں زیتومیر کے علاقے میں جنگی مشن کے دوران آپس میں ٹکرا گئے۔

یوکرینی فضائیہ کے 40 ویں ٹیکٹیکل ایوی ایشن بریگیڈ نے تصادم میں ہلاک ہونے والے تین پائلٹوں کے نام بھی جاری کر دئیے ہیں۔ ان میں میجر ویاچسلاو منکا، میجر سرگئی پروکازین اور کیپٹن آندرے پِلشیکوف شامل ہیں۔ پِلشیکوف "گس" کے نام سے مشہور تھے۔

بیان میں کہا گیا کہ پِلشیکوف بہادر اور اصولوں کا آدمی تھا جس نے کوئی سمجھوتہ نہیں کیا۔ خاص طور پر یوکرین کو جدید ایف سولہ لڑاکا طیاروں کی فراہمی کی اہمیت پر زور دینے کے لیے اس نے مغربی میڈیا کے ساتھ بھرپور طریقے سے بات چیت کی۔

ہلاک ہونے والے تینوں پائلٹ روس کی جارحیت کے بعد سے یوکرین کے دفاع میں فضائی کارروائیوں میں شامل رہے ہیں۔

یوکرین کے صدر زیلینسکی نے بھی سب سے پہلے تصادم کے متاثرین کو خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے ہفتے کے روز کہا کہ ان پائلٹس نے یوکرین کے آزاد آسمان کا دفاع کیا تھا۔

واضح رہے دو تربیتی لڑاکا طیاروں کے درمیان ہونے والے تصادم نے کیف کو بہت بڑا دھچکا پہنچایا ہے۔ کیف اپنی فضائیہ کو جدید بنانے کے لیے ایف سولہ لڑاکا طیارے حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں