سعودی عرب کا امریکا میں مقیم اپنے شہریوں کو سمندری طوفان ایڈالیا سے قبل انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا کے شہر ٹیکساس میں واقع سعودی قونصل خانے نے مملکت کے شہریوں سے کہا ہے کہ وہ طوفان ایڈالیا سے قبل محتاط رہیں۔

ایڈالیا کے ریاست فلوریڈا کے خلیجی ساحل کے قریب آنے اور بدھ کے روز زمین سے ٹکرانے کے بعد ایک بڑے سمندری طوفان کی شکل اختیار کرنے کی توقع ہے۔مقامی حکام نے بہت سے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا ہے اور مکینوں پر زور دیا ہے کہ وہ قدرتی مظاہر سے نمٹنے کی تیاری کریں۔

قونصل خانے نے سعودی شہریوں پر زور دیا ہے کہ وہ سرکاری طور پر جاری کردہ تازہ معلومات واطلاعات پر نظر رکھیں اور طوفان اور خراب موسمی حالات سے نمٹنے کے لیے خصوصی ہدایات پر عمل کریں۔

اس نے ہنگامی صورت حال میں کال کرنے کے لیے رابطہ نمبر فراہم کیے: 281-889-0570، 281-917-8658، اور 281-917-8305.

میامی میں قائم امریکا کے قومی سمندری طوفان مرکز (این ایچ سی) کے مطابق ایڈالیا بدھ کی صبح کم سے کم 111 میل فی گھنٹا (179 کلومیٹر فی گھنٹا) کی رفتار سے جھکڑ چلنے کے ساتھ بڑے سمندری طوفان کی شکل اختیار کر سکتا ہے۔

این ایچ سی نے پیشین گوئی کی ہے کہ ایڈالیا کا مرکز ممکنہ طور پرفلوریڈا کی ساحلی پٹی کو بگ بینڈ کے علاقے میں عبورکرے گا ، جہاں ریاست کا شمالی سرا جزیرہ نما فلوریڈا کے خلیجی حصے میں گھومتا ہے۔

خلیج میکسیکو کے گرم پانیوں کے اوپر طوفان شمال کی طرف بڑھتے ہوئے ایک غیر یقینی راستے پر تھا۔طوفان مرکز نے فلوریڈا کے دوکروڑ دس لاکھ مکینوں میں سے زیادہ تر کے ساتھ ساتھ جارجیا اور جنوبی کیرولائنا کے جنوبی حصوں میں سمندری طوفان، اور طوفانی لہروں کی وارننگ جاری کی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ ایڈالیا سے انسانی زندگی کو سب سے بڑا خطرہ سمندری پانی کی بڑھتی ہوئی دیواروں کی وجہ سے ہے جو تیز ہواؤں کی وجہ سے اندرون ملک پھیل جائے گا جس سے نشیبی ساحلی علاقے زیر آب آ جائیں گے۔

طوفان کی وارننگ شمال میں سرسوٹا سے ٹمپا تک اور اپالاچیکولا خلیج کے مغربی سرے پر واقع انڈین پاس کے ماہی گیروں کی پناہ گاہ تک سیکڑوں میل پر محیط ساحل کے لیے جاری کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں