سعودی معیشت

سعودی پی آئی ایف 3.3ارب ڈالر سے سابک کے میٹل یونٹ کو بڑی اسٹیل کمپنی بنائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کا خودمختار دولت فنڈ کیمیا سازکمپنی سعودی بیسک انڈسٹریز کارپوریشن (سابک) کے میٹل یونٹ کے حصول کے ساتھ ایک نئی اسٹیل کمپنی قائم کررہا ہے۔اس کی انٹرپرائز قدر 12.5 ارب ریال (3.3 ارب ڈالر) ہے۔

پبلک انویسٹمنٹ فنڈ سعودی آئرن اور اسٹیل کمپنی کو سابک سے خریدکرے گا۔ایک اور معاہدے کے تحت سابک کا اسٹیل یونٹ الحدید ،الراجحی اسٹیل انڈسٹریز کمپنی کو اسٹاک کے عوض خریدکرے گا۔ توقع ہے کہ یہ معاہدہ 2024ء کی پہلی سہ ماہی کے اختتام سے پہلے مکمل ہوجائے گا۔

یہ معاہدہ عرب دنیا کی سب سے بڑی معیشت پر سعودی خودمختار دولت فنڈ کے بڑھتے ہوئے اثرو رسوخ کی تازہ علامت ہے۔ پی آئی ایف ملک کے زیادہ تر ترقیاتی منصوبوں کا ذمے دار ہے جس کا مقصد تیل کی فروخت سے حاصل ہونے والی آمدن پر انحصار کو ختم کرنے میں مدد دینا ہے۔ان میں آٹو مینوفیکچرنگ مرکز کی ترقی ، سیاحت کے منصوبے اور وسیع پیمانے پر نئے شہروں کے تعمیراتی منصوبے شامل ہیں۔

پی آئی ایف کے ڈپٹی گورنر اور مشرق اوسط اور شمالی افریقا میں سرمایہ کاری کے شعبے کے سربراہ یزید الحمید نے ایک بیان میں کہا:’’یہ لین دین پی آئی ایف کی مالیاتی صلاحیتوں اور صنعت کے تجربے کو الحدید اور الراجحی اسٹیل کی معروف تکنیکی اور تجارتی مہارت کے ساتھ یکجا کرے گا، تاکہ سعودی عرب کے اسٹیل کے شعبے میں ایک قومی چیمپیئن کی تشکیل کی جا سکے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں