ترکیہ میں نوبیاہتا جوڑا سیلاب میں ڈوب کر جہاں بحق، صدمے سے ہر آنکھ اشک بار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

رواں ہفتے ترکیہ میں آنے والے تباہ کن سیلاب کے باعث ہونے والی اموات میں ایک نوبیاہتا جوڑا بھی شامل ہے جو اپنی موت سےتین ماہ قبل رشتہ ازدواج میں منسلک ہوا تھا۔

اگرچہ ترکیہ میں سیلاب کے نتیجے میں مرنے والوں میں سے ہر ایک کی ایک اپنی الگ کہانی ہے لیکن کے ڈاکٹر سلمان باگیشلار اور ان کی اہلیہ مہربان کی موت کے واقعے نے ہر ایک کو صدمے سے دوچار کیا ہے۔ دونوں تین ماہ قبل ہی رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئے تھے۔ دونوں ایک ساتھ استنبول میں واقع ایک ہسپتال میں کام کرتے تھے۔

ترک میڈیا کی رپورٹ کے مطابق ان کی شادی 3 ماہ قبل ہوئی تھی اور وہ اپنی سالانہ تعطیلات کے لیے اس جگہ پر آئے تھے جہاں سیلاب میں ڈوبنے سے ان کی المناک موت واقع ہوئی۔

نوبیاہتا جوڑے کے رہنے اور جنازے کے مناظر۔
نوبیاہتا جوڑے کے رہنے اور جنازے کے مناظر۔

ڈاکٹر باگیشلار اور ان کی اہلیہ ریاست انطالیہ کے قریب انالیا کے سیاحتی علاقے میں سیلاب کے نتیجے میں اس وقت ہلاک ہو گئے جب وہ اپنی سالانہ چھٹیاں گزار رہے تھے۔ وہ بس میں جا رہے تھے کہ اچانک سیلابی ریلہ اسے بہا لے گیا۔

ان کی لاشیں استنبول کے اس ہسپتال میں منتقل کی گئیں جس میں وہ کام کرتے تھے۔ ان کے ساتھ جوڑے کی اس ناگہانی موت پر شدید صدمے سے دوچار ہیں۔

ترک جوڑے کے عزیز و اقارب ہسپتال کے باہر جمع ہیں۔
ترک جوڑے کے عزیز و اقارب ہسپتال کے باہر جمع ہیں۔

ان کی لاشیں ملنے سے پہلے دونوں متاثرین سے رابطہ منقطع ہو گیا تھا، لیکن انہوں نے ڈوبنے سے پہلے آخری لمحات میں اپنے اہل خانہ کو بتایا کہ شاید وہ طوفانی سیلاب سے زندہ نہیں بچ پائیں گے۔

مقامی میڈیا نے بتایا کہ دونوں کے اہل خانہ نے انہیں دو مختلف مقامات پر دفن کیا کیونکہ وہ ایک ہی علاقے سے نہیں آئے تھے۔

ترک نوبیاہتا جوڑا
ترک نوبیاہتا جوڑا

ترکی میں سیلاب کے نتیجے میں ڈاکٹر، ان کی اہلیہ اور تین دیگر افراد کی ہلاکت کے بعد سوشل میڈیا پر غصے کی لہر دوڑ گئی۔ سوشل میڈیا پر ترک بلاگرز نے قدرتی آفات کا مقابلہ کرنے کے قابل مضبوط انفراسٹرکچر کی کمی کی وجہ سے سیلاب کے نتیجے میں ہونے والی اموات کا ذمہ دار حکومت اور شہری انتظامیہ کو قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں