لیبیا کے شہر درنہ میں سیلاب گھروں کو بہا لے گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

لیبیا میں مشرقی شہر درنہ میں طرفانی بارشوں کے باعث وادی کے ندی نالوں میں طغیانی آگئی اور پانی شہر کی آبادیوں کو اپنے ساتھ بہا لے گیا۔ سیلاب نے عمارتوں اور لوگوں سمیت شہر کو مکمل طور پر پانی میں غرق کر دیا۔ بحیرہ روم کے طوفان "ڈینیل" کے باعث شہر میں تباہی پھیل گئی ہے۔

سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی تصاویر اور ویڈیو کلپس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ شہر کے وسط میں موسلا دھار بارش کے بعد عمارتیں تباہ ہو چکی ہیں اور تقریباً پانی سے ڈوبی ہوئی ہیں۔ بہت سے عمارتوں کو پانی بہا کر لے گیا اور ان کے ملبے کو سمندر بُرد کردیا۔ یہ سیلاب دو ڈیموں کے ٹوٹنے کے باعث آیا تھا۔

لیبیا کے حکام نے درنہ شہر کے اندر کی صورتحال قابو سے باہر ہونے اور پانی کے اندر جانے کے بعد اسے آفت زدہ علاقہ قرار دے دیا۔ امدادی ٹیمیں اس تک پہنچنے میں ناکام رہی تھیں اور انہوں نے اندر پھنسے ہوئے لوگوں کو نکالنے کے لیے بین الاقوامی مداخلت کا مطالبہ کردیا ہے۔

گزشتہ ہفتے کے آخر میں لیبیا میں بارشوں کی شدید ترین لہر برسوں کی شدید ترین لہر تھی۔ طوفانی بارشوں نے بہت بڑا، ناقابل تصور اور ناقابلِ حساب نقصان پہنچایا ہے۔ طوفانی بارشوں کے باعث لیبیا میں 150 سے زیادہ افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ حکام نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اموات کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں