مصر میں غیرت کے نام پر بہن کا سفاکانہ قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مصر میں ایک بھائی نے اپنی بہن کو اس کی منگنی پر اعتراض کرتے ہوئے گلی میں ذبح کر دیا۔

شمالی مصر کے پورٹ سعید گورنری میں بھیانک قتل کی واردات کے بعد تحقیقات سے ثابت ہوا کہ قاتل لڑکی کا بھائی تھا اور اس نے اپنی بہن کو اس کی مرضی کے بغیر کسی سے منگنی کرنے پر اعتراض کرتے ہوئے ذبح کیا۔


عینی شاہدین نے انکشاف کیا کہ لڑکی کو موٹر سائیکل پر سوار دو افراد نے اس وقت روکا جب وہ مسجد کے سامنے والی سڑک پر چل رہی تھی اور ان میں سے ایک نے اس پر سفید رنگ کے چاقو سے وار کرکے اس کا گلا کاٹ دیا اور اسے چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

تحقیقات سے معلوم ہوا کہ قاتل لڑکی کا بھائی تھا جس کا نام محمد نبیل تھا اور اس نے اپنی بہن فریدہ کو، جس کی عمر 24 سال تھی، کو اس کی رضامندی کے بغیر کسی سے منگنی پر اعتراض کرتے ہوئے ذبح کیا۔

مقتولہ
مقتولہ

مقتولہ شادی کے ملبوسات کی ایک دکان پر کام کرتی تھی اور اپنی پسند سے شادی کرنا چاہتی تھی۔

مقتولہ نے اپنی پسند سے منگنی کی اور بھائی اس سے نالاں تھا۔

مقامی پولیس نے دونوں ملزمان کو گرفتار کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں