امارات نے آفات سے متاثرہ ممالک کی مدد کے لیے ڈیجیٹل پلیٹ فارم متعارف کروا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امارات نیوز ایجنسی (وام) نے جمعہ کو رپورٹ کیا کہ متحدہ عرب امارات ایک ڈیجیٹل رسپانس پلیٹ فارم شروع کرے گا جس کا مقصد ہے کہ آفات سے متأثرہ ممالک کو دنیا کو تیزی سے ان کی انسانی ضروریات سے آگاہ کرنے میں مدد کی جائے۔

مصنوعی ذہانت، مشین کے ذریعے کام اور جغرافیائی اسباب کا استعمال کرتے ہوئے یہ پلیٹ فارم ضرورت مند ممالک تک مؤثر اور تیز رفتار امداد کی ترسیل کو ممکن بنائے گا۔

اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل میں بین الاقوامی امن و سلامتی کے قیام پر ایک کھلی بحث کے دوران اس اقدام کے آغاز کا اعلان کیا گیا۔

نیویارک میں اقوامِ متحدہ میں متحدہ عرب امارات کی مستقل نمائندہ لانا ذکی نصیبیہ نے کہا، "ہمیں بحران کے شکار انسانی نظام کا سامنا ہے۔ ماضی کا فنِ تعمیر حال کے بحرانوں سے ہم آہنگ نہیں رہ سکتا۔"

انہوں نے مزید کہا، " قدرتی آفات کے تناظر میں متحدہ عرب امارات ایک ڈیجیٹل پلیٹ فارم تیار کر رہا ہے تاکہ بین الاقوامی مدد کو بہتر طریقے سے استعمال کرنے کی حکومتوں کی اہلیت کی حمایت کی جائے۔ ہم آئندہ مہینوں میں حکومتوں، نجی شعبے اور انسانی ہمدردی کی تنظیموں کے ساتھ اس پر کام کرنے کے منتظر ہیں تاکہ ہماری بحرانی ردِعمل کی صلاحیتوں کو تقویت دینے کے لیے ایک نیا ذریعہ شروع کیا جا سکے۔"

وام کے بیان کے مطابق متحدہ عرب امارات عالمی انسانی امداد دینے والا ایک بڑا ملک ہے اور دبئی میں قائم بین الاقوامی ہیومینٹیرین سٹی دنیا کا سب سے بڑا انسانی امدادی مرکز ہے۔

اس میں 62 انسانی تنظیمیں، اقوام متحدہ کی بڑی ایجنسیاں اور 17 نجی کمپنیاں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں