مالٹا کی امدادی ٹیم نے لیبیا کے شہر درنہ کے ساحل سے 'سیکڑوں' لاشیں برآمد کرلیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مالٹا کے محکمہ شہری تحفظ نے ہفتے کے روز اطلاع دی ہے کہ ان کی ایک امدادی ٹیم نے جمعہ کے روز لیبیا کے سیلاب زدہ شہر درنہ کے ساحل سے سیکڑوں لاشیں برآمد کی ہیں۔

مالٹا کی امدادی ٹیم کے سربراہ نتالینا بیزینا نے اخبار ٹائمز آف مالٹا کو بتایا کہ ساحل پر ’’ممکنہ طور پر قریباً 400 لاشیں موجود تھیں لیکن (حتمی تعداد کے بارے میں) کچھ کہنا مشکل ہے‘‘۔

مالٹا نے بدھ کے روز فوج اور محکمہ شہری تحفظ ( سی پی ڈی) کے 72 امدادی کارکنوں پر مشتمل ایک ٹیم ساحلی علاقے میں امدادی سرگرمیوں کے لیے بھیجی تھی۔

ان ہی میں سے چار افراد پر مشتمل ایک ٹیم نے لیبی باشندوں کی یہ لاشیں دریافت کی ہیں۔اس کو سب سے پہلے سمندر کے کنارے ایک غار کے اندر تین بچّوں سمیت سات لاشیں ملی تھیں۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ طوفان دانیال کے ساتھ آنے والی بارشوں کے نتیجے میں دو ڈیم منہدم ہو گئے تھے جس سے ساحلی شہر درنہ کا ایک چوتھائی حصہ بہ گیا تھا۔

بیزینا نے مالٹا کے میڈیا کو بتایا کہ سی پی ڈی کی ایک چھوٹی سی ٹیم اس غار کے پار پہنچی جو آدھا ڈوبا ہوا تھا اور اس کو اس کے اندر سے لاشیں ملی تھیں۔

جب انھوں نے تلاش جاری رکھی تو ان کے ساتھ لیبیا کے امدادی کارکنان بھی شامل ہو گئے جو ہلاک شدگان اور زندہ بچ جانے والوں کی تلاش کر رہے تھے۔ پھر انھیں ملبے سے بھری ایک چھوٹی سی خلیج نظر آئی جس میں سے سیکڑوں لاشیں ملی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں