روسی صدر کے ہاتھ پر ’جھریاں کیا ولادی میر پوتین اتنے بوڑھے ہوگئے ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ہمیشہ کی طرح ہر سیاسی موقع پر یوکرین کے وزیر داخلہ کے مشیر اینٹون گیراشینکو بعض اوقات اپنی طنزیہ بات یا شکوک و شبہات کو جنم دینے کا موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتے۔

اس بار انہوں نے روس کے صدر ولادیمیر پوتین کی اپنے بیلاروسی ہم منصب الیگزینڈر لوکاشینکو کے ساتھ ملاقات کے دوران ایک ویڈیو کا استعمال کیا، جس میں کریملن کے حکمران کی بیماری کا اشارہ دیا۔

دراصل سوشل میڈیا پر پوسٹ کی گئی ویڈیو میں ولادی میرپوتین کے ہاتھ کو زوم کرکے زیادہ قریب سے دکھایا گیا ہے جس میں ان کے ہاتھ پر جھریاں دیکھی جا سکتی ہیں۔

یوکرینی اہلکار نے’ایکس‘ پلیٹ فارم (سابقہ ٹویٹر) پر اپنے اکاؤنٹ پر پوسٹ کردہ ویڈیو میں پوتین کے ہاتھ کی کیفیت دکھائی ہے۔ یہ ویڈیو اس وقت بنائی گئی جب وہ بیلا روس کے صدر کے ساتھ بات کررہے تھے اور باتوں میں وہ ہاتھ ہلا کر اشارہ کر رہے تھے۔

"قاتل کے ہاتھ میں کیا خرابی ہے؟"

اس نے پوتین کے ہاتھ کو زوم کیا۔ زوم کرنے سے ہاتھ زیادہ عمر کا اور جھریوں سے بھرا نظر آرہا تھا۔ اس نے استفسار کیا کہ "پوتین کے قاتل ہاتھ میں کیا خرابی ہے؟!"

تاہم گیراشینکو کی جانب سے پوتین کی صحت کے بارے میں شکوک و شبہات پیدا کرنے کی کوشش کی گئی۔ ویڈیو پر بہت سے لوگوں نے رد عمل کا اظہار کیا۔ بعض صارفین کا کہنا ہے کہ ویڈیو میں ہاتھ کو زوم کرکے مشکوک بنانے کی کوشش کی گئی حالانکہ وہ 100 فیصد نارمل نظر آتی ہے۔

یوکرینی حکام اور حکام کی جانب سے 71 سالہ روسی صدر کی صحت کے بارے میں کئی نظریات سامنے آئے۔

کچھ یوکرینی انٹیلی جنس رپورٹس نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ اسے کینسر ہے۔

جب کہ کچھ لوگوں کا تصور اس سے کہیں آگے نکل گیا۔ انھوں نے اشارہ کیا کہ وہ شخص کئی مہینوں سے عوام کے سامنے نہیں آیا تھا۔انہوں نے عام ملاقاتوں کے لیے اپنے دو ہم شکلوں سے بھی مدد مانگی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں