چین دنیا میں غالب طاقت بننے کا خواہاں ہے: بلینکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلینکن نے کہا ہے کہ چین تائیوان پر تناؤ پیدا کرنے کے خلاف بیجنگ کے انتباہ کا اعادہ کرتے ہوئے امریکہ کی قیمت پر دنیا میں غالب طاقت بننا چاہتا ہے۔

دی اٹلانٹک میگزین کی طرف سے منعقد ایک فورم کے دوران چین کے ارادوں کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں بلینکن نے کہا کہ میرے خیال میں وہ کیا چاہتا ہے کہ وہ عسکری، اقتصادی اور سفارتی طور پر دنیا کی غالب طاقت بن جائے۔

انہوں نے مزید کہاکہ یہ وہی ہے جو شی جن پنگ تلاش کر رہے ہیں۔ شی جن پنگ 10 سال سے زیادہ عرصے سے ملک کی قیادت کر رہے ہیں۔ یہ حیرت کی بات نہیں ہے۔ چین کی تاریخ حیرت انگیز ہے۔ اگر آپ چینی رہنماؤں کو دیکھ رہے اور سن رہے ہیں تو میرے خیال میں وہ اپنا مزعومہ درست مقام بحال کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

بلنکن نے مزید کہا کہ چین کے تائیوان کے بارے میں انتباہات غیر معمولی طور پر زیادہ ہیں۔ یہ عالمی معیشت میں اس کی شراکت داری کی بنا پر ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر چینی اقدامات کے نتیجے میں تائیوان کے حوالے سے کوئی بحران پیدا ہوا تو ہمیں عالمی اقتصادی بحران کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ہم امن اور استحکام چاہتے ہیں اور ہر کوئی جمود کو برقرار رکھنا چاہتا ہے۔ بلنکن نے اس سے قبل بھی ورلڈ آرڈر کو دوبارہ لکھنے کی چینی خواہش کے بارے میں بات کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں