صومالیہ: چائے کی دکان میں خودکش بم دھماکہ، 7 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

صومالیہ میں دار الحکومت موگا دیشیو میں چائے کی دکان پر خودکش دھماکہ کردیا گیا۔ دھماکے میں 7 افراد جاں بحق ہوگئے۔ ایک عینی شاہد اور طبی عملے نے بتایا کہ جمعہ کی سہ پہر کا دھماکہ پارلیمنٹ اور صدر کے دفتر کی طرف جانے والی سڑک پر ایک چوکی پر ہوا۔ اس دکان پر اکثر فوجی آتے رہتے تھے۔

پولیس کے ترجمان صادق علی نے بتایا کہ بمبار القاعدہ سے منسلک گروہ ’’الشباب‘‘ کا رکن تھا۔ حملہ آور نے پانچ لوگوں کو مار ڈالا، یہ سب چائے پی رہے تھے۔ خودکش حملہ آور خوارجی دہشت گردوں میں سے ایک تھا۔ جائے وقوعہ پر موجود ایک عینی شاہد اور طبی عملے نے مرنے والوں کی تعداد سات اور زخمیوں کی تعداد آٹھ بتائی ہے۔

دھماکے کی جگہ پر موجود ایک عینی شاہد احمد علی نے رائٹرز کو بتایا کہ میں نے سات ہلاک ہونے والوں اور چھ دیگر زخمیوں کو لے جانے میں مدد کی ہے۔ زخمیوں میں سے زیادہ تر فوجی تھے۔

فوری طور پر یہ واضح نہیں ہو سکا کہ اس حملے کا ذمہ دار کون تھا۔ پولیس اور سرکاری اہلکاروں نے فوری طور پر تبصرہ کرنے والی کالوں کا جواب نہیں دیا۔ ماضی میں، القاعدہ سے منسلک الشباب گروپ نے موگادیشو اور صومالیہ کے دیگر حصوں میں ایسے ہی حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ جون میں الشباب نے موگادیشو کے جنوب مغرب میں ایک حملے میں یوگنڈا کے 54 فوجیوں کو ہلاک کر دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں