بھارت نے کینیڈا کو اپنے 41 سفارت کار 10 اکتوبر تک کو واپس بلانے کا نوٹس دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فنانشل ٹائمز نے منگل کو خبر دی کہ بھارت نے کینیڈا سے کہا ہے کہ وہ 10 اکتوبر تک اپنے 41 سفارت کاروں کو وطن واپس بلا لے۔

بھارت اور کینیڈا کے درمیان تعلقات کینیڈا کے اس شبہ پر سخت کشیدہ ہو گئے ہیں کہ بھارتی حکومت کے ایجنٹس کا کینیڈا میں جون میں سکھ علاحدگی پسند رہنما اور کینیڈین شہری ہردیپ سنگھ نجار کے قتل میں کردار تھا جسے ہندوستان نے "دہشت گرد" قرار دیا تھا۔

بھارت نے اس الزام کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ہے۔

بھارتی مطالبے سے واقف لوگوں کا حوالہ دیتے ہوئے فنانشل ٹائمز نے کہا کہ ہندوستان نے ان سفارت کاروں کا سفارتی استثنیٰ منسوخ کرنے کی دھمکی دی ہے جو 10 اکتوبر کے بعد رہ گئے۔

اخبار نے کہا کہ ہندوستان میں کینیڈا کے 62 سفارت کار ہیں اور ہندوستان نے کہا تھا کہ کل 41 کو کم کیا جائے۔

ہندوستان اور کینیڈا کی وزارتِ خارجہ نے اس خبر پر تبصرے کی درخواستوں کا فوری طور پر جواب نہیں دیا۔

ہندوستانی وزیر خارجہ سبرامنیم جے شنکر نے کہا کہ اس سے قبل کینیڈا میں ہندوستانی سفارت کاروں کے خلاف "تشدد کی فضا" اور "ڈرانے دھمکانے والا ماحول" تھا جہاں سکھ علیحدگی پسند گروپوں کی موجودگی نے نئی دہلی کو تنگ کر رکھا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں