سعودی قیادت کا ترک صدر کو پیغام، انقرہ میں دہشت گردی کے واقعے کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے ترک صدر رجب طیب ایردوآن کو پیر کے روز ایک ٹیلی گرام بھیجا، جس میں انہوں نے انقرہ میں ہونے والے دہشت گردانہ حملے کی مذمت کی ہے۔

شاہ سلمان نے کہا کہ "ہمیں انقرہ میں ہونے والے دہشت گردانہ حملے اور اس کے نتیجے میں دو پولیس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی خبر ملی۔ ہم اس مجرمانہ فعل کی پر زور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے۔ دہشت گردی کے خلاف سعودی عرب، جمہوریہ ترکیہ کے ساتھ کھڑا ہے۔ ہم اس واقعے میں زخمی ہونے والے ترک شہریوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعاگو ہیں"۔

ادھر سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے بھی ترک صدر کو علاحدہ سے بھیجے گئے ایک مراسلے میں انقرہ میں دہشت گردی کے واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

ولی عہد نے کہا کہ "مجھے انقرہ میں ہونے والے دہشت گردانہ حملے اور اس کے نتیجے میں دو پولیس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی خبر ملی۔ میں اس مجرمانہ فعل کی مذمت کرتا ہوں۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ زخمیوں کو جلد صحت یاب کرے۔

خیال رہے کہ اتوار کے روز انقرہ میں وزارت داخلہ کے ہیڈکواٹرز کے قریب ہونے والے خودکش حملے اور فائرنگ میں کم سے کم دو ترک پولیس اہلکار زخمی ہو گئے تھے۔

ترک حکومت نے اس واقعے کی ذمہ داری کرد عسکریت پسند گروپ ’پی کے کے‘ پر عاید کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں