سعودی عرب اور ایران کی فٹ بال ٹیمیں منسوخ شدہ فٹ بال میچ دوبارہ کھیلنے پر آمادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب اور ایران کے درمیان کھیلوں کے مقابلے بھی بحال ہونا شروع ہو گئے ہیں۔ ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے اعلان کیا ہے کہ دونوں ملکوں نے منسوخ شدہ فٹبال میچ ری شیڈیول کر کے کھیلنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر خارجہ نے یہ اعلان بدھ کے روز کیا ہے۔

واضح رہے چین کے توسط سے دونوں ملکوں میں سفارتی تعلقات کی رواں سال بحالی کے بعد دوطرفہ کھیلوں کا از سر نو شروع ہونا اہم بات ہے۔

فٹبال میچ سٹیڈیم میں ایرانی پاسداران انقلاب کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی کا مجسمہ لگانے کی وجہ سے منسوخ کرنا پڑا کیونکہ سعودی عرب نے جنرل قاسم سلیمانی کا سٹیڈیم میں مجسمہ رکھنے کو سیاسی ایشو قرار دیا تھا۔ سعودی موقف تھا کہ کھیلوں میں سیاست نا کی جائے۔

خبر رساں ایجنسی ’ایرنا‘ کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ نے فٹبال میچ کے نئے اعلان کے موقع پر کہا وہ بھی سمجھتے ہیں کہ کھیلوں کو سیاست سے الگ رکھنا چاہئے۔ ان کا کہنا تھا وہ سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان کےساتھ رابطے میں ہیں۔ اس لئے دونوں ملک کھیلوں کی بحالی کی تصدیق کرتے ہیں۔

سعودی عرب اور ایران کے درمیان فٹ بال میچ سعودی الا تحآد اور ایرانی سپاہان کے درمیآن کھیلا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں