ریڈ کراس سے فلورنس نائٹنگیل میڈل جیتنے والے پہلے سعودی عبدالعزیز لعنزی کون ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے نرسنگ کے شعبے میں کام کرنے والے عبدالمجید بن عسکر العنزی نے انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈ کراس کی جانب سے فلورنس نائٹنگیل میڈل جیتا ہے۔ یہ ایوارڈ نرسنگ کے شعبے میں کام کرنے والوں کو دیا جانے والا سب سے بڑا تمغہ ہے۔

نرس عبدالمجید عسکر العنزی کو سعودی عرب کا پہلا جب کہ عرب اور خلیج عرب میں ایوارڈ حاصل کرنے والا چھٹا عرب شہری قرار دیا جاتا ہے۔ پہلی بار یہ تمغہ 1912ء میں جاری کیا گیا جو نرسنگ کے پیشے کے لیے ہمت اور لگن کی نشاندہی کرتا ہے۔

عبدالمجید العنزی کو سعودی ایمبولیٹری سروسز کانفرنس میں اعزاز سے نوازا گیا اور یہ تمغہ نائب وزیر صحت نے سعودی ریڈ کریسنٹ اتھارٹی کے چیئرمین کی موجودگی میں پیش کیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے ساتھ گفتگو میں انہوں نے کہا کہ میں نے مکہ مکرمہ میں 13 سال سے زائد عرصے تک رضاکارانہ ایمبولینس خدمات فراہم کیں۔ تمغہ حاصل کرنے کی شرائط میں سے ایک جنگ یا امن میں زخمیوں کی مدد میں شامل ہے۔ ہم، الحمد للہ امن میں ہیں۔ امن اور جنگ میں طبی خدمات انجام دینے کی سروس نے میڈل حاصل کرنے میں مدد کی۔

میں نے کرونا وبا کے وقت المہاجر ہیلتھ اینڈ ویکسینیشن میں رضاکارانہ طور پر کام کیا اور میں نے بہترین خدمات پیش کرنے میں حصہ لیا۔ نرسنگ کے شعبے میں دنیا کے مضبوط ترین میگزینوں میں شمار ہونے والے ایک میگزین میں نرسنگ پر تحقیق شائع کرنے کے علاوہ کمیونٹی کے لیے 400 سے زیادہ طبی، تعلیمی، اور سماجی تقریبات، بین الاقوامی دن اور طبی کانفرنسوں میں شرکت کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں