ملکہ برطانیہ کو قتل کی دھمکی پر نو سال کی سزائے قید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آنجہانی ملکہ برطانیہ الزبتھ کو قتل کی دھمکی دینے والے شہری کو عدالت نے نو سال کے لئے جیل بھیج دیا ہے۔ عدالت کے سامنے ملزم نے اعتراف کیا تھا کہ اس نے ملکہ کو دھمکی دے کر انسداد بغاوت ایکٹ کی خلاف ورزی کا ارتکاب کیا تھا۔

گذشتہ چالیس برسوں کے دوران بغاوت کے قانون کے تحت پہلے شخص کے خلاف کارروائی ہوئی ہے۔

ملزم جس کا نام جسونت سنگھ اور عمر 21 سال بتائی گئی ہے کو جب گرفتار کیا گیا اس نے سیاہ رنگ کا لباس اور ایک ہڈ پہن رکھی تھی۔ چہرے پر ماسک اور ہاتھوں پر دستانے چڑھا رکھے تھے۔

وہ2021 مغربی لندن کے علاقے ونڈسر کیسل میں صبح آٹھ بجے کرسمس کے روز گرفتار ہوا تھا۔ جہاں وہ ملکہ کو دھمکی دینے کا مرتکب ہوا تھا۔

ملکہ برطانیہ جن کا 96 سال کی عمر میں ستمبر 2022 میں انتقال ہوا تھا اس وقت کیسل میں اپنے ولی عہد اور موجودہ شاہ برطانیہ چارلس کے ہمراہ تھیں۔

اب جمعرات کے روز ملزم کی عدالت میں موجودگی کے دوران سزا سنائی گئی۔ یہ سزا جج نکولس ہلیرڈ نے سنائی۔ جیل بھجوانے سے پہلے ملزم کا ہسپتال میں علاج جاری رہے گا۔

عدالت نے قرار دیا کہ اگرچہ ملزم ونڈسر کیسل جائے وقوعہ پہنچنے کے بعد نفسیاتی مریض ہو چکا تھا مگر اس کی جارحیت نمایاں تھی۔ جج کا یہ بھی کہنا تھا کہ ملزم نے جب جرم کا ارادہ کیا تھا تو وہ نفسیاتی عدم توازن کا شکار نہیں تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں