روس اور یوکرین

یوکرین نے 24 روسی ڈرون مار گرائے، دو روسی علاقوں پر گولہ باری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یوکرین کے علاقے میں روسی فوجی آپریشن جاری ہے۔ دوسری طرف تازہ ترین فیلڈ پیش رفت میں یوکرین کی مسلح افواج کے جنرل اسٹاف نے آج جمعرات کو کہا ہے کہ فضائی دفاع نے کل رات روس کی جانب سے یوکرین کی سرزمین پر لانچ کیے گئے کل 29 ڈرونز میں سے 24 کو مار گرایا۔

یوکرین کی فضائیہ نے بتایا کہ ڈرون جنوب میں اوڈیسا اور میکولائیو کے علاقوں کے ساتھ ساتھ وسطی علاقوں میں کیروہوراڈ کے علاقے میں تباہ کیے گئے۔

یوکرینی سدرن ملٹری کمانڈ نے کہا ہے کہ "دشمن جنوب میں بندرگاہ اور دیگر انفراسٹرکچر کو تباہ کرنے کی اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے اور وسطی علاقوں میں بھی دہشت پھیلا رہا ہے۔" انہوں نے مزید کہا کہ کیرووہراڈ کے علاقے میں ایک غیر متعینہ بنیادی ڈھانچے کی سہولت پر بمباری کی گئی اور بمباری کے نتیجے میں لگنے والی آگ کو بجھا دیا گیا۔

میکولاف سے
میکولاف سے

اس تناظر میں روس کے صوبہ برائنسک کے گورنر الیگزینڈر بوگوماز نے آج جمعرات کو اعلان کیا ہے کہ یوکرین کی افواج نے صوبے کے سوزیمکا ضلعے کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں توانائی کی فراہمی معطل ہوگئی۔

بوگوماز نے اپنے ٹیلیگرام چینل پر کہا کہ "یوکرین کے دہشت گردوں نے سوزیمکا قصبے پر بمباری کی تاہم اس کے نتیجے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا اور بمباری کے نتیجے میں توانائی کی سپلائی میں خلل پڑا"۔

دوسری طرف روسی صوبہ کرسک کے گورنر رومن سٹاروویٹ نے آج جمعرات کو اعلان کیا کہ یوکرین کی افواج کی طرف سے صوبے کے شہر ریلسک کو کلسٹر گولہ بارود سے نشانہ بنانے کے نتیجے میں ایک خاتون کو شیل لگنے سے زخمی ہو گئی۔

انہوں نے اپنے ٹیلیگرام چینل پر کہا کہ "سرحدی شہر پر یوکرین کی طرف سے کلسٹر گولہ بارود سے بمباری کی گئی۔ ایک خاتون معمولی زخمی ہوئی اور اسے سینٹرل ڈسٹرکٹ ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں