دوران قید نوبیل انعام جیتے پر یو این اور فرانس کا ایرانی خاتون کو خراج تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیریس اور فرانس کے صدر عمانویل ماکرون نے ایرانی جیل میں قید خواتین کے حقوق کی کارکن نرگس محمدی کو نوبیل امن انعام ملنے کے اعلان پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نرگس محمدی کے لیے امن کا نوبیل انعام ان تمام خواتین کے لیے خراج تحسین ہے جو اپنی آزادی و حقوق کے لیے ہی نہیں بلکہ اپنی صحت اور زندگی کے حقوق کے لیے بھی جدوجہد کر رہی ہیں۔ اس لڑائی کے لیے وہ اپنی زندگیوں کو بھی خطرے میں ڈال رہی ہیں۔

سیکرٹری جنرل کے اس بارے میں جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے 'امن انعام کے لیے نرگس محمدی کا انتخاب اس امر کی یاد دہانی ہے کہ خواتین اور بچیوں کے حقوق کو ایک بڑے دھچکے کا سامنا ہے۔ نہ صرف یہ کہ ان خواتین کے بنیادی انسانی حقوق کے حوالے سے ظلم کا سامنا ایران میں کرنا پڑ رہا ہے بلکہ دوسری کئی جگہوں پر بھی یہی صورت حال ہے۔

فرانس کے صدر عمانویل ماکرون نے اس سلسلے میں اپنے بیان میں ایران میں قید کاٹنے والی خاتون کارکن نرگس محمدی کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ' نوبل انعام آزادی پسندوں کے لیے ایک مضبوط انتخاب کا مظہر ہے۔' صدر فرانس کے مطابق آزادی کے لیے لڑنے والوں کو ہمہ وقت ایک ایسی حقیقت کا سامنا کرنا پڑتا ہے جس کا دوسرا نام ظلم اور جبر کی رجیم ہے۔

فرانسیسی صدر نے مزید کہا آزادی چاہنے والوں کو کئی سال جیلوں میں بند رہنا پڑتا ہے اور خوفناک سزائیں بھگتنا پڑتی ہیں۔ ماکرون نے نرگس محمدی کے خاندان کو بھی سلام پیش کیا جن میں سے کئی اب بھی ایران میں رہ رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں