تاجکستان میں 57 سکولوں کی تعمیر کے لیے 35 ملین ڈالر کی سعودی فنڈنگ

دیگر شعبوں میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے بھی کروڑوں ڈالرز مالیت کی امداد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے تاجکستان میں تعلیم کے شعبے میں تعاون کے لیے قائم سعودی فنڈ برائے ترقی [ایس ڈی ایف] کے تحت سکولوں کی تعمیر کے چوتھے مرحلے میں 34 سکولوں کی تعمیر مکمل کر لی گئی۔ اس منصوبے کے تحت مجموعی طور پر تاجکستان میں سعودی عرب کے فراہم کردہ فنڈز سے 57 سکول تعمیر کیے جانے کا طے کیا گیا تھا۔

سعودی فنڈ برائے ترقی نے اس سلسلے میں مجموعی طور پر 35 ملین ڈالر کی خطیر رقم مختص کی ہے۔ اس خطیر رقم سے قائم ہونے والے ایک سکول جس کا افتتاح تاجکستان کے نائب وزیر تعلیم و سائنس نے کیا ہے میں 36 کمرے تعمیر کیے گئے ہیں۔ جبکہ اس سکول میں کم از کم 620 طلبہ کے پڑھنے کی گنجائش ہے۔ نائب وزیر تعلیم نے سکول کا افتتاح شہریناو میں کیا ہے۔

افتتاحی تقریب میں سعودی سفیر برائے تاجکستان ولید الرشیدان اور ایس ڈی ایف کے سربراہ بھی بطور خاص موجود تھے۔ سعودی فنڈ برائے ترقی سے تعمیر ہونے والے تاجکستان کے ان سکولوں میں 25000 طلبہ کی تعلیم ممکن ہو سکے گی۔

تاجکستان کے نائب وزیر تعلیم نے افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران مملکت کا شکریہ ادا کیا کہ تاجکستان کے تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے سعودی عرب کی دلچسپی اور تعاون مفید تر کردار کا حامل ہے۔

ایس ڈی اف کے چیف ایگزیکٹو سلطان المرشد نے کہا 'ایس ڈی ایف کے لیے تعلیم کی اہمیت غیر معمولی ہے۔ تعلیم ہی طلبہ کو اور نئی نسل کو قومی ترقی کے لیے تیار کرنے کا ذریعہ ہے۔ اس تعلیمی منصوبے کے تحت طلبہ میں علمی استعداد اور ہنر مندی و مہارتوں کو فروغ دیا جائے گا۔

واضح رہے تعلیمی شعبے کے علاوہ سعودی عرب ایس ڈی ایف کے ذریعے دیگر کئی شعبوں میں بھی فنانسنگ کر رہا ہے۔ ان میں 12 ترقیاتی منصوبے بھی شامل ہیں جن کی لاگت کا تخمینہ 193 ملین ڈالر لگایا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں