توانائی کے شعبے میں تعاون کے لیے سعودی، بھارت مفاہمتی یادداشت پر دستخط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب اور بھارت کے وزرائے توانائی نے ایک مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیے ہیں۔ یہ مفاہمتی یادداشت برقی اعتبار سے دو طرفہ طور پر منسلک ہونے، ہائیڈروجن اور کلین انرجی کی فراہمی کے امور سے متعلق ہے۔

دوطرفہ مفاہمتی یادداشت پر دستخط ' مینا' کے زیر اہتمام ہفتہ موسمیات کے سلسلے کی کامفرنس کی سائیڈ لائنز میں کیے گئے ہیں۔

توانائی کے حوالے سے دو طرفہ تعاون سے متعلق اس یادداشت پر سعودی عرب کی طرف سے وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان اور بھارت کی جانب سے بھارتی وزیر برائے بجلی و توانائی راج کمار سنگھ نے دستخط کیے ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ یہ مفاہمتی بندوبست ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان گذشتہ ماہ طے پانے والے معاہدوں کو آگے بڑھانے کے سلسلے میں ہیں۔

دونوں ملک ہائیڈروجن اور کلین انرجی کے حوالے سے ترقیاتی منصوبوں پر بھی کام کریں گے۔ بھارت اور سعودی عرب کے درمیان مستقبل میں برقی امور میں شراکت داری ہنگامی حالات کے علاوہ توانائی کی انتہائی کھپت کے دنوں کے لیے کریں گے۔

دونوں ملک توانائی کے نیٹ ورکس کو باہم منسلک کریں گے اور ایک دوسرے کی ضرورت کے لیے توانائی کے ذخائر کی تیاری میں تعاون کریں گے۔ نیز توانائی کی قیمتوں میں کمی کے سلسلے میں مل کر کام کریں گے تاکہ عام صارف کو سہولت مل سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں