اسرائیل کے واچ ٹاور پر حملے میں تین ارکان کی موت پر افسوس ہے: حزب اللہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرائی نے اعلان کیا ہے کہ اسرائیل کے لڑاکا ہیلی کاپٹر نے لبنان میں چھاپہ مار کر کارروائی کی۔ اس کے بعد حزب اللہ گروپ نے ایک نیا بیان جاری کیا اور بتایا کہ اسرائیل کے حملے میں اس کے تین ارکان مارے گئے ہیں۔ حزب اللہ پارٹی نے کہا پیر کو سہ پہر جنوبی لبنان میں اس کے ٹھکانے پر اسرائیلی بمباری میں جاں بحق تین افراد کی موت پر افسوس ہے۔

حزب اللہ نے کہا کہ یہ تینوں سرحد پر واچ ٹاور کو نشانہ بنانے والی اسرائیلی کاررواں میں ہلاک ہوئے۔ دوسری طرف لبنانی فوج نے پیر کو اعلان کیا کہ دونوں ملکوں کے درمیان سرحدی علاقوں پر اسرائیلی بمباری میں اس کا ایک افسر زخمی ہوا ہے۔

فوج نے ایک بیان میں کہا کہ اسرائیل کی طرف سے جنوب میں سرحدی علاقوں پر بمباری کی گئی اور متعدد مارٹر گولے رمیش قصبے کے باہر لبنانی فوج کے ایک مرکز کے صحن میں گرے جس سے ایک افسر معمولی زخمی ہوا۔

اسرائیلی فوج نے لبنانی علاقے میں اہداف پر چھاپہ مار کارروائی شروع کرنے کا اعلان کیا ۔ توپ خانے سے گولہ باری کے بعد جنوب کے مغربی سیکٹر میں الضھیرہ قصبے کی سرحدوں پر اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپ ہوئی۔ اس جھڑپ میں ایک اسرائیلی ہلاک ہوگیا ۔

تحریک اسلامی جہاد نے لبنان سے اس کارروائی کی ذمہ داری قبول کی جہاں لبنان کی سرحد کے قریب جھڑپوں میں تین اسرائیلی فوجی زخمی ہوئے۔ سوشل میڈیا پر کنٹرول ٹاور کو نشانہ بنائے جانے کا ایک ویڈیو کلپ بھی وائرل کیا گیا ہے۔ واضح رہے 7 اکتوبر کو حماس نے غزہ سے اسرائیل پر ’’ طوفان الاقصی‘‘ کے نام سے آپریشن شروع کردیا۔ جنگ تیسرے روز بھی جاری رہی۔ جنگ میں 1000 اسرائیلی ہلاک اور 687 فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں