اسرائیل-حماس جنگ: جمائمہ گولڈ سمتھ کے بیان پر سوشل میڈیا صارفین برس پڑے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل اور حماس کے درمیان ہونے والی جنگ میں پاکستان کے سابق وزیراعظم عمران خان کی سابق اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ نے ایک طرف جھکاؤ کے بجائے دونوں طرف کے معصوم انسانوں اور خصوصاً بچوں کے ساتھ ہمدری کا اظہار کیا۔

9 اکتوبر کو جمائمہ گولڈ اسمتھ نے سماجی پلیٹ فارم ایکس پر پوسٹ شئیر کی جس میں لکھا تھا کہ ’میں بین الاقوامی قانون اور انسان حقوق کے ساتھ کھڑی ہوں، سیاست میں کسی گروہ کے ساتھ حد سے زیادہ وفاداری انسانیت کو ختم کر سکتی ہے۔‘

اسی دوران فلمساز جمائما نے فلسطینی اور اسرائیلی بچوں کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ میں اس کشیدگی میں دونوں طرف کے معصوم انسانوں اور خصوصاً بچوں کے ساتھ کھڑی ہوں۔

انہوں نے کشیدگی کے دوران دونوں طرف سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت کی۔

فلسطین کی کھلے عام حمایت نہ کرنے پر پاکستانی سوشل میڈیا صارفین جمائمہ پر برس پڑے اور ان کے بیان پر مایوسی کا اظہار کیا۔

آمنہ میر نامی صارف نے لکھا کہ ’ظالم کے ساتھ کھڑے ہو یا مظلوم کے ساتھ، ایسے بیانات زیادہ نقصان پہنچاتے ہیں۔ ’

رطابہ نامی صارف نے لکھا کہ ’مجھے امید ہے کہ اس پوسٹ کے بعد پاکستانی ہر وقت جمائما ’بھابھی‘ کے بارے میں ضرورت سے زیادہ بات کرنا چھوڑ دیں گے‘۔

اسرائیل حماس جنگ

فلسطینیوں پر کئی سالوں سے جاری مظالم کے بعد حماس کی جانب سے اسرائیل پر 7 اکتوبر کو سمندر، زمین اور فضا سے اچانک حملے کیے گئے تھے جس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

ان حملوں کے بعد اسرائیل نے بھی جوابی کارروائی کرتے ہوئے غزہ پر فضائی حملے کیے جس کے نتیجے میں تقریباً سینکڑوں افراد جاں بحق اور 2 ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔

غیر ملکی نشریاتی اداروں کی رپورٹ کے مطابق حماس کے ’طوفان الاقصیٰ آپریشن‘ کے آغاز اور اسرائیل کے جوابی حملوں میں اسرائیل میں ہلاکتوں کی تعداد 1200 تک پہنچ چکی ہے جبکہ غزہ میں 900 سے زائد اموات ہوئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں