فلپائن میں مسلح حملے میں ایک سعودی شہری جاں بحق، اہلیہ زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلپائن میں مقیم ایک سعودی شہری دو موٹر سائیکل سواروں کے گھات لگا کر کئے گئے حملے میں جاں بحق اور اس کی اہلیہ شدید زخمی ہوگئی۔

بدھ کو جاری ہونے والے ایک بیان میں شریف اگواک کے میئر داتو احمد نے گھات لگا کر حملے کی مذمت کی اور پولیس کو دونوں مجرموں کی شناخت، گرفتار اور قانونی کارروائی کا حکم دیا ہے۔

فلپائنی خبر رساں ایجنسی نے واقعے کے عینی شاہد شہر کے پولیس چیف میجر ہارون میکاپنڈنگ کے حوالے سے بتایا کہ ہلاک ہونے والے شخص کی عمر 50 سال اور اس کی زخمی بیوی کی عمر 45 سال تھی۔ دونوں داتو پیانگ ماگوئندانو ڈیل سور میں رہائش پذیر تھے۔

میکاپنڈنگ نے بتایا کہ جاں بحق سعودی شہری جو اپنا پک اپ ٹرک (NER 6511) چلا رہا تھا گولی لگنے سے موقعے پر ہی دم توڑ گیا۔ شام 6 بجے ہونے والے اس حملے کے دوران اس کی بیوی کو گولی لگنے سے اس کے جسم پر گولیاں لگی تھیں۔

جوڑے نے ابھی حال ہی میں پڑوسی بارنگے لاپو لاپو، داتو ہوور قصبے میں ایک فارم کا دورہ کیا تھا اور وہ اس قصبے سے ہو کر گھر جا رہے تھے جب دو بندوق برداروں نے ان پر گھات لگا کر حملہ کیا۔

ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا کہ دونوں بندوق برداروں کو پک اپ ٹرک کا تعاقب کرتے دیکھا گیا اور انہوں نے گھات لگا کر حملہ کیا۔

سعودی سفارتخانے کا بیان

منیلا میں سعودی سفارت خانے نے ایک بیان میں کہا ہے کہ "فلپائن میں سعودی عرب کے سفارت خانے کو سعودی شہری کے ہاتھوں قتل اور اس کی اہلیہ کے زخمی ہونے کی خبر انتہائی دکھ اور افسوس کے ساتھ موصول ہوئی ہے۔

فلپائن کے جنوبی صوبے مینگاندانو میں ایک نامعلوم شخص نے ان پر اس وقت فائرنگ کی جب سعودی شہری اپنی اہلیہ کے ساتھ اپنی گاڑی شریف اگواک کے علاقے میں عوامی سڑک پر چلا رہا تھا۔

سعودی سفارت خانے کا کہنا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نےملزموں کو جلد از جلد گرفتار کرنے اور ان کے خلاف قانونی کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں