بچے کو گاڑی تلے روندنے پردلہا کو شادی کی پہلی رات حوالات میں گذارنا پڑ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترک نوجوان کے ذہن میں کبھی یہ خیال نہیں آیا ہوگا کہ وہ اپنی دلہن کو شادی کے دن اکیلا چھوڑ کر جیل میں اپنی شادی کی پہلی رات اکیلے گزارےگا۔ تاہم یہ اس کی بدقسمتی ہے کہ اس کے ساتھ ایسا ہوا۔

شادی کے اختتام پرگاڑی چلاتے ہوئے ایک بچہ سڑک عبور کرتے ہوئے دلہا کی گاڑی کی زد میں آگیا۔ اس وقت وہ شادی ہال سے کئی کلو میٹر دور تھا۔ یہ اس کے ساتھ یہ حادثہ ساحلی شہر ازمیر کے مضافات میں پیش آیا۔

’این ٹی وی‘ سمیت مقامی ترک ویب سائٹس کی جانب سے رپورٹ کی گئی تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ نوبیاہتا جوڑا آدھی رات کے بعد اپنی شادی کی تقریب ختم ہونے کے بعد ازمیر ریاست میں اپنے گھر جا رہا تھا لیکن دولہا کی گاڑی ایک بچے پر چڑھ گئی جس کے بعد پولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔

راہگیروں نے زخمی بچے کے لیے ایمبولینس طلب کی اور اسے کارابگلر علاقے کے قریب ایک ہسپتال لے جایا گیا جہاں یہ حادثہ پیش آیا۔

تصویروں میں درجنوں راہگیروں کو بچے کے ارد گرد جمع دکھایا گیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق ڈرائیور کو حراست میں لے لیا گیا اور وہ ابھی تک جیل میں ہے جب کہ زخمی بچہ تشویشناک حالت میں ہسپتال میں ہے۔

میڈیا نے ڈرائیور اور اس کی دلہن کے بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کیں اور صرف یہ بتایا کہ زخمی ہونے والے بچے کا تعلق شام سے ہے اور اس کا تعلق ایک پناہ گزین خاندان سے ہے جو برسوں سے ترکیہ میں مقیم ہے۔ زخمی بچے کی عمربارہ سال بتائی جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں