ریپڈ رسپانس میرین یونٹ اسرائیل کے قریب پانیوں کی طرف روانہ: امریکی اہلکار‎

ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے اعلیٰ لڑاکا طیاروں، جنگی جہازوں اور دیگر طیاروں کی مدد سے ہزاروں میرینز آہستہ آہستہ خلیج میں جمع ہو رہے ہیں۔ (اے پی)

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک امریکی اہلکار نے پیر کو بتایا کہ ایک تیز رفتار جوابی میرین یونٹ اسرائیل کے ساحل کی طرف روانہ ہو رہا ہے کیونکہ مؤخر الذکر غزہ میں حماس کے عسکریت پسندوں کے خلاف آپریشن شروع کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔

اہلکار نے بتایا کہ 26ویں میرین ایکسپیڈیشنری یونٹ (ایم ای یو) اسرائیل کے قریب پانیوں کی طرف بڑھ رہی ہے۔ اہلکار نے العربیہ کو بتایا کہ "انہیں کوئی مشن نہیں سونپا گیا ہے۔"

تازہ ترین اقدام کے باوجود امریکی حکام کا کہنا ہے کہ اسرائیل میں امریکہ کی تادیر موجودگی کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔ تاہم اطلاعات کے مطابق امریکی فوجیوں کا ایک گروپ یرغمالیوں کی بازیابی کے لیے مشورہ اور مدد کر رہا ہے۔

گذشتہ ہفتے اسرائیل پر حماس کے حملوں کے بعد امریکی وزیرِ خارجہ لائیڈ آسٹن نے مشرقی بحیرۂ روم میں دو امریکی طیارہ بردار بحری جنگی گروپوں کی تعیناتی اور لڑاکا طیاروں کو بڑھانے کا حکم دیا تھا۔

ایک سینیئر امریکی دفاعی اہلکار نے کہا کہ شرق اوسط میں فوجی پوزیشن میں اضافے کا مقصد یہ ہے کہ حماس کے حملے کے بعد ایران، لبنان کی حزب اللّٰہ اور خطے میں کسی بھی دوسرے فریق کے لیے رکاوٹ کے طور پر کام کیا جائے۔

واشنگٹن نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ لبنانی حزب اللّٰہ شمال سے اسرائیل پر حملہ کر سکتی ہے۔ لبنان کے اندر موجود فلسطینی دھڑوں کی طرف سے راکٹ اور میزائل حملوں کے نتیجے میں حزب اللّٰہ کے اہداف کے خلاف اسرائیل نے جوابی کارروائیاں کی ہیں۔ گروپ کے مطابق حزب اللّٰہ کے کم از کم چار سپاہی مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں